حکمران اتحاد میں شامل جماعتوں کی پارلیمانی پارٹیوں کا مشترکہ اجلاس ، اپوزیشن سے مذاکرات کےلئے چاررکنی کمیٹی تشکیل

حکمران اتحاد میں شامل جماعتوں کی پارلیمانی پارٹیوں کا مشترکہ اجلاس ، ...

            اسلام آباد(اے این این ) حکمران اتحاد میں شامل جماعتوں کی پارلیمانی پارٹیوں کا مشترکہ اجلاس ، اپوزیشن سے مذاکرات کےلئے چاررکنی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ، کمیٹی تحفظات دور کرنے کی کوشش کرے گی۔ تفصیلات کے مطابق حکمران اتحادمیں شامل جماعتوں کی مشترکہ پارلیمانی پارٹی کا اجلاس سینٹ میں قائد ایوان راجہ ظفر الحق کی زیرصدارت ہوا۔ اجلاس میں جمعیت علماءاسلام (ف) کے سیکرٹری جنرل سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری‘ سینیٹر حاجی غلام علی‘ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز رشید‘ نیشنل پارٹی کے سربراہ سینیٹر حاصل بزنجو‘ جے یو آئی (ف) کے سینیٹر طلحہ محمود اور فاٹا سے تعلق رکھنے والے سینیٹر عباس خان آفریدی سمیت دیگر ارکان نے شرکت کی۔ اجلاس کی خاص بات یہ تھی کہ اس میں ایم کیو ایم کے سینیٹر سید طاہر حسین مشہدی نے بھی خصوصی طور پر شرکت کی۔ اجلاس میں سینٹ کے حالیہ اجلاس اور اپوزیشن کو منانے کے حوالے سے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اپوزیشن کابائیکاٹ ختم کرنے کےلئے اس کے ساتھ مذکرات کےلئے چاررکنی کمیٹی تشکیل دی گئی جس جے یو آئی( ف) کے مولانا عبدالغفور حیدری، مسلم لیگ (ن) کے سینٹر ظفر علی شاہ، نیشنل پارٹی بلوچستان کے میر حاصل بزنجو اور فاٹا کے عباس خان آفریدی شامل ہیں۔ دوسری طرف چیئرمین سینٹ سید نیئر حسین بخاری نے کہا ہے کہ اپوزیشن کو منانے کے لئے قائد ایوان کی طرف سے بنائی گئی کمیٹی کو کام کرنے کا موقع ملنا چاہیے‘ اچھی پارلیمانی روایت یہی ہے کہ اپوزیشن ایوان میں موجود ہو۔ جمعہ کو ایوان بالا کے اجلاس میں سینیٹر حاصل بزنجو نے نکتہ اعتراض پر کہا کہ بدقسمتی سے اپوزیشن نے اجلاس سے واک آﺅٹ کردیا ہے جس کی وجہ سے سیشن بلانے کا فائدہ نہیں ہو سکا۔ ایک بھی ایجنڈا آئٹم نہیں لیا جاسکا۔ چیئرمین نے کہا کہ قائد ایوان نے ایک کمیٹی بنا دی ہے جو اپوزیشن کو منانے کی کوششیں کرے گی‘ اچھی پارلیمانی پریکٹس یہ ہے کہ اپوزیشن بھی ایوان میں ہو۔ حکومت نے کورم تو پورا کرلیا ہے لیکن بہتر ہے کہ اپوزیشن بھی آجائے تاکہ ایجنڈے کے مطابق کارروائی آگے بڑھ سکے۔

چار رکنی کمیٹی

مزید : صفحہ اول