عمران خان کا اسلام آباد لاک ڈاﺅن کرنے کا فیصلہ واپس ،کچھ کارکن خوش تو کچھ شدید ناراض ہو گئے

عمران خان کا اسلام آباد لاک ڈاﺅن کرنے کا فیصلہ واپس ،کچھ کارکن خوش تو کچھ ...

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) عمران خان کی طرف سے منگل کی سہ پہر اسلام آباد لاک ڈاون کا فیصلہ واپس لینے پر تحریک انصاف کے کارکنوں میں مایوسی کی لہر دوڑ گئی اور سینکڑوں کارکن آبدیدہ بھی دکھائی دئیے۔

تحریک انصاف کا 2 نومبر کا احتجاج موخر، کل یوم تشکر منانے اور پریڈ گراﺅنڈ پر جلسہ کرنے کا اعلان، پہلی بار پاکستان میں طاقتور کی ’تلاشی‘ ہونے جا رہی ہے: عمران خان

بنی گالا کے باہر موجود تحریک انصاف کی خاتون کارکن نے کہا کہ میں آج یہاں اس لیے کھڑی ہوں کیونکہ میں اپنا پاکستان ان چوروں اور لٹیروں سے واپس لینا چاہتی ہوں ۔اس نے روتے ہوئے کہا کہ مجھے خوف تھا کہ 2نومبر کو کیا ہو گا کیونکہ ہم قتل و غارت گری نہیں چاہتے تھے ،اب جو بھی فیصلہ ہوا ہے وہ خوش آئند ہے ۔فرط جذبات میں خاتون نے پولیس کی بھی تعریف کر دی اور کہا کہ پاکستان ،یہاں کے لوگ اور پولیس بہت اچھی ہے ،ہمیں صرف اور صرف اس ملک میں بگاڑ پیدا کرنے والوں کا احتساب کرنا ہے ۔

بنی گالہ میں جب عمران خان نے بدھ کو پریڈ گراونڈ میں یوم تشکر منانے کا اعلان کیا تو وہاں موجود پی ٹی آئی کے بیشتر کارکنوں نے نو نو اور اسلام آباد بند کرو کے نعرے لگائے۔پی ٹی آئی کے بعض رہنما بالخصوص خیبر سے آئے ہوئے کارکنوں نے اس فیصلے پر ناپسندیدگی کا اظہار بھی کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نے ہمیں جو امید دلائی تھی اسے خود ہی مایوسی میں تبدیل کردیا ہے۔

مزید : اسلام آباد