یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں "پاکستان میں مڈ وائف کے احیاء"کے موضوع پرسیمینار

یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں "پاکستان میں مڈ وائف کے احیاء"کے موضوع ...

لاہور( جنرل رپورٹر) یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں منگل کے روز "پاکستان میں دایہ گیری کے احیاء"کے موضوع پر بین الاقوامی سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔ سیمینار کا انعقاد برطانیہ کی یونیورسٹی آف ولورہیمپٹن کے اشتراک سے کیا گیا۔ تقریب کی مہمانِ خصوصی پاکستان نرسنگ کونسل کی صدر ڈاکٹر رفعت جان تھیں۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر رفعت جان نے کہا کہ مڈ وائفس یا دایہ کی تربیت کے ذریعے پاکستان میں ماں اور نوزائیدہ بچوں کی اموات میں دو تہائی کمی لائی جاسکتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ لیڈی ہیلتھ وزیٹرز اور کمیونٹی مڈوائفس بہت اہم خدمات انجام دے رہی ہیں۔ ان کیلئے بھی ایک اچھا کیریئر سٹریکچر بننا چاہیے ۔ انھوں نے مزید کہا کہ یونیورسٹیاں لیڈی ہیلتھ وزیٹرز اور کمیونٹی مڈوائفس کیلئے اکیڈمک پروگرامز تربیت دیں تاکہ انھیں اپنے کیریئرمیں ترقی ملے۔ یو ایچ ایس کے وائس چانسلر میجر جنرل ریٹائرڈ پروفیسر محمد اسلم نے کہا کہ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز نے یونیورسٹی آف ولورہیمپٹن کے ساتھ مل کر نرسوں اور ڈاکٹروں کیلئے مڈ وائفری میں ایک سرٹیفیکٹ پروگرام شروع کرنے کا معاہدہ کیا ہے۔

ابتدائی طور پر یہ پروگرام لاہور، گجرات، گوجرانوالہ اور ساہیوال میں شروع کیا جائے گے تاہم بعدازاں اس کا دائرہ کار بڑھایا جائے گا۔ سیمینار سے یونیورسٹی آف ولورہیمپٹن کی ڈاکٹر این ہولن شیڈ، مرسیا ایڈورڈ ، برطانیہ کے ماہر امراض اطفال ڈاکٹر اے آر گیٹرڈ، یو ایچ ایس کے ڈائریکٹر سی آئی ایل ٹی ڈاکٹر عارف رشید خواجہ اور کلفٹ ہاسپٹل گجرات کے ڈاکٹر اعجاز بشیر نے بھی خطاب کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4