پیر محل ،گندم میں رکھنے والی زہریلی گولیوں کی سرعام فروخت جاری

پیر محل ،گندم میں رکھنے والی زہریلی گولیوں کی سرعام فروخت جاری

پیرمحل(نمائندہ خصوصی+نمائندہ پاکستان )تحصیل میں انسانی زندگیوں کے لئے خطرہ بنی گندم میں رکھنے والی اور دیگر زہریلی گولیوں کی کھلے عام فروخت جاری،انتظامیہ خاموش تماشائی بن کر رہ گئی۔ گندم کو مختلف وائرس اور کیڑوں سے بچاؤ کے لئے زہریلی اور دیگرگولیوں سے خود کشی کے واقعات کوئی نئی بات نہیں مگر تحصیل انتظامیہ کی مبینہ غفلت کی وجہ سے مذکورہ گولیاں شہری اور دیہی حلقوں میں کھلے عام فروخت ہو رہی ہیں ۔اگر جائزہ لیا جائے تو زہریلی گولیوں سے خود کشی کا رجحان بڑھ جانے پر بھی کسی ذمہ دار کا حرکت میں نہ آنا لمحہ فکریہ سے کم نہیں ہے اور گذشتہ کچھ عرصہ میں زہریلی گولیاں کھانے سے نا بالغ بچوں کی اموات کے واقعات بھی رونماء ہو چکے ہیں ۔طبی ماہرین کے مطابق گولیاں اس قدر زہریلی ہیں کہ انہیں اگر انسان سونگھ بھی لے تو اس کی موت واقع ہو سکتی ہے اور نگلنے کی صورت میں یہ گولی انسان کے دل ،جگر اور پھیپھڑوں کو چند لمحوں میں ہی تباہ کر ڈالتی ہے ۔

گولیوں کی کھلے عام فروخت کو روکنے کے لئے شہری حلقوں نے سینکڑوں بار آواز بلند کی مگر تاحال کوئی پیش رفت نہ ہونا تحصیل انتظامیہ آفیسران کی کارکردگی پربڑا سوالیہ نشان ہے۔ اگر ہنگامی بنیادوں پر زہریلی گولیوں کی فروخت میں ملوث عناصر کے خلاف قانونی چارہ جوئی عمل میں نہ لائی گئی تو انسانی زندگیاں بدستور خطرات میں گھری رہیں گیں ۔

مزید : علاقائی