بھارتی افواج منظم طریقے سے کشمیریوں کی نسل کشی کررہی ہیں، میرواعظ عمر فاروق

بھارتی افواج منظم طریقے سے کشمیریوں کی نسل کشی کررہی ہیں، میرواعظ عمر فاروق

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں حریت فورم کے چےئرمین میرواعظ عمرفاروق نے کہا ہے کہ بھارتی افوج کالے قوانین کی آڑ لے کر منظم طریقے سے کشمیری نوجوانوں کی نسل کشی کررہی ہیں۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق میرواعظ عمرفاروق نے سرینگر میں ایک بیان میں 16سالہ طالب علم قیصرحمید صوفی پر قاتلانہ حملے کی مذمت کرتے ہوئے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں پر زوردیا کہ وہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا نوٹس لیں۔ سرینگر کے علاقے شالیمار سے تعلق رکھنے والے عبد الحمید صوفی کے بیٹے قیصر حمید صوفی کو جو میران شاہ صاحب سکول کے طالب علم ہیں بھارتی فورسز نے گرفتار کرکے شدید تشدد کا نشانہ بنایا اور زبردستی کیڑے مار دوائی ’’نیوا‘‘کھلائی اور بعد میں اس کو بے ہوشی کی حالت میں سڑک پر پھینک دیا۔ وہ صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ میں موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا ہے۔ میرواعظ نے قیصر کے والدین سے اظہار ہمدردی کرتے ہوئے کہاکہ آج کے دور میں ایسے ظلم و بربریت کی مثالیں کم ہی ملتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی فورسز کریک ڈاؤن کرکے لوگوں کو ہراساں اور گھروں کی توڑ پھوڑ کررہی ہیں۔ انہوں نے کلگام میں بھارتی فورسزکے چھاپے کی وجہ سے انتقال کرنے والی نوسالہ بچی کے والدین سے بھی اظہار یکجہتی اور اظہار ہمدردی کیا۔ دریں اثناء میرواعظ فورم کے ترجمان نے سابق کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نیویارک میں اپنی ایک تقریر میں اپنے بھارتی آقاؤں کو خوش کرکے انہیں ستم رسیدہ کشمیری بچوں کا دکھ درد تڑپا رہا ہے۔ جبکہ چند سال پہلے انہیں کی سربراہی120کشمیری نوجوانوں کو بے رحمی کے ساتھ قتل کیا گیاجن میں زیادہ تر طلباء تھے۔ ترجمان نے میرواعظ عمرفاروق سمیت حریت رہنماؤں مختار احمد وازہ، ایڈوکیٹ شاہد الاسلام کی مسلسل نظربندی اور علیل حریت رہنما غلام نبی ذکی کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتاری کی مذمت کی ۔ ذکی کو کوٹ بھلوال جیل میں نظربند کیا گیا ہے۔

مزید : عالمی منظر