مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر بر صغیر ہندوپاک میں امن ناممکن ہے :عبدالغنی بٹ

مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر بر صغیر ہندوپاک میں امن ناممکن ہے :عبدالغنی بٹ

سری نگر(کے پی آئی) مسلم کانفرنس کے سربراہ پروفیسر عبدالغنی بٹ نے بوٹینگو ، ہرودہ شیواہ اور ڈورو کے مسلم کانفرنس کے اراکین سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر بر صغیر ہندوپاک میں امن ناممکن ہے ۔ انہوں نے کہا ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کشید گی کی بنیادی وجہ کشمیر کا مسئلہ ہے۔ اگر یہ مسئلہ 1947 میں حل ہواہوتا تاکہ آج کل ایسی صورت نہیں ہوتی ۔ ہندوستان اور پاکستان میں امن تب تک قائم نہیں ہوسکتا جب تک کہ اس مسئلے کا آبرومندانہ حل نہیں نکالا جاسکے۔ کشمیر قوم نے لاتعداد قربانیاں دی ۔

جانوں کی قربانیاں ، یہاں تک بینائیوں کی بھی قربانیاں دی تاکہ ہندوستان اور پاکستان اس مسئلے کا حل نکال سکے۔ بر صغیر ہندوپاک میں امن اور ترقی جھگڑوں کے بیچ ممکن نہیں ہوسکتی ۔ اس مسئلے کی وجہ سے ہندوستان اور پاکستان چوتھی جنگ کے دہانے تک پہنچ گئے ہیں۔ اگر خدا نخواستہ جنگ کی صورتحال پیدا ہوئی تو یہ سارے برصغیر ایشا کے لئے تباہ کن ثابت ہوسکتا ہے ۔ اسلئے ضروری ہے کہ امن قائم ہو اور اس سلسلے میں ہندوستان اورپاکستان کو بات چیت کی پہل کرنی ہوگی تاکہ جنگ کی تباہ کاریوں سے بچا جاسکے اور امن وترقی کے راستے کھولے جاسکیں۔ یہ تب تک ممکن نہیں ہوسکتا جب تک نہ اصل مسئلے مسئلہ کشمیر کے حل پر ضرور نہیں دیا جاسکے اور بہتر ہے پہلے مسئلہ کشمیر کے حل پر ہی بات چیت شروع ہو اور باقی معاملات خود بخود حل ہونگے ۔

مزید : عالمی منظر