دھرنا موخر کرنے پر تحریک انصاف کے چار اتحادی عمران خان سے ناراض

دھرنا موخر کرنے پر تحریک انصاف کے چار اتحادی عمران خان سے ناراض

لاہور(جاوید اقبال‘ شہزاد ملک) تحریک انصاف کی طرف سے آج دو نومبر کا دھرنا موخر کرنے پر عمران خان کے چار واحد اتحادی ان سے ناراض ہو گئے ہیں جس کا اظہار انہوں نے عمران خان سے بھی کردیا ہے انہوں نے اس فیصلے پر انہیں کڑی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ انہوں نے ایک مرتبہ پھر یو ٹرن لیکرسولو فلائٹ کی اگر وہ دھرنے کا فیصلہ برقرار رکھتے تو حکومت کا وجود ختم ہو سکتا تھا ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ سپریم کورٹ میں تحریک انصاف کی طرف سے دھرنا موخر کرنے اور جوڈیشنل کمیشن کے قیام پر رضامند ہونے جیسے فصلوں کے بعد عمران خان سے ان کے واحد اتحادیوں مسلم لیگ (ق) کے مرکزی رہنما پرویز الہی ‘ پاکستان عوامی تحریک کے سر براہ ڈاکٹر طاہر القادری ‘ عوامی مسلم لیگ کے شیخ رشید اور سنی اتحاد کونسل کے چئیرمین صاحبزادہ حامد رضا نے مشترکہ دوستوں کے ذریعے رابطے کئے اور ان پر واضح کیا کہ انہوں نے فیصلہ کرنے سے قبل انہیں اعتماد میں نہیں لیا اور نہ ہی ان سے اس سلسلے میں کوئی مشاورت کی عمران خان کے اس فیصلے سے وہ نہ خوش ہیں عمران خان نے اپنے طرز سیاست سے ثابت کردیا ہے کہ وہ سولو فلائٹ کے عادی ہیں انہوں نے ایسا کرکے حکومت کو آکسیجن فراہم کی ہے اگر وہ ایسا نہ کرتے اور آج کے دھرنے پر قائم رہتے تو حکومت قائم نہ رہتی یہ ان کا اپنا فیصلہ ہے جس کی ہم حمائت نہیں کرتے آئندہ اگر کبھی ایسا موقع آیا تو وہ ان پر اعتماد نہیں کریں گے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اگرچہ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد بنی گالہ بھی گئے اور مشاورت میں بھی پیش پیش تھے مگر انہوں نے عمران خان سے اپنی ملاقات میں دھرنے کو موخر کرنے کی مخالفت کی اور کہا کہ جوڈیشنل کمیشن کا قیام ایک اچھا اقدام ہے لیکن سیاسی پریشر کو برقرار رکھنے کے لئے دھرنا دیدیا جائے اور سپریم کورٹ کے باقاعدہ فیصلے تک اس سیاسی پر یشر کو قائم رہنا چاہئے مگر ان کی تجویز کو بھی قبول نہ کیا گیا ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اس پر بھی شیخ رشید احمد ناراض ہیں اور انہوں نے اٹھائیس اکتوبر کو لال حویلی نہ آنے پر بھی عمران خان سے شکوہ کیا اور کہا کہ اگر وہ اس دن لال حویلی آ جاتے تو سیاسی منظر نامہ ہی تبدیل ہو جاتا ۔دوسری طرف مسلم لیگ (ق) کے مرکزی رہنما چودھری پرویز الہی کا کہنا ہے کہ عمران خان نے یو ٹرن لیکر مایوس کیا یہ ان کا اپنا فیصلہ ہے اس سلسلے میں اتحادیوں سے مشاورت نہیں کی گئی دھرنا ہوتا تو (ق) لیگ ایک ہر اول دستے کا کردار ادا کرتی تیاریوں میں میرے بیٹے پر بھی ایک جھوٹا مقدمہ درج ہوا ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کے چار اتحادی ہیں جو عمران خان کے اس فیصلے سے ان سے سخت نالاں ہیں اس حوالے سے پی ٹی آئی کے سیکرٹری جنرل جہانگیر خان تریں کا کہنا ہے کہ اتحادیوں کے ساتھ رابطے میں ہیں سب کو اعتماد میں لیں گے سپریم کورٹ ملک کی سپریم ادارہ ہے اس کا حکم ماننا ہم سب پر فرض ہے اب سپریم کورٹ کے حکم پر وزیراعظم کی تلاشی ضرور ہو گی یہی ہمارا مطالبہ تھا جو کہ پورا ہونے جا رہا ہے ہمارے چئیرمین عمران خان نے ملک و قوم کے حق میں فیصلہ دیا ہے ہم سپریم کورٹ کے مشکور ہیں ۔

مزید : صفحہ اول