3بھتیجوں کو قتل کرنے کے جرم میں چچا کو 3بار سزائے موت اور 3لاکھ روپے جرمانہ

3بھتیجوں کو قتل کرنے کے جرم میں چچا کو 3بار سزائے موت اور 3لاکھ روپے جرمانہ

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج عبدالرحمن بودلہ نے 8ماہ کے شیر خوار بچے سمیت 3معصوم بچوں کو رات سوتے ہوئے قتل کرنے والے مجرم فریاد عون (چچا) کو جرم ثابت ہونے پر 3بار سزائے موت اور 3 لاکھ روپے جرمانے کی سزا ؤں کا حکم سنا دیا ہے جبکہ ماں کو زخمی کرنے پر مذکورہ مجرم کو16سال قید اورڈیڑھ لاکھ روپے قصاص زخمی ماں کو بھی ادا کرنے کا حکم دیا ہے ۔ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں تھانہ شاہدرہ پولیس نے ملزم فریاد عون کے خلاف اپنے 3بھتیجوں 5سالہ شکیل، دو سالہ عظیم اور 8ماہ کے محمد وسیم کو بے دردی سے ذ بح کرنے اور ان کی والدہ سلمی کو زخمی کرنے کے الزام میں چالان پیش کررکھا تھا۔عدالت میں یہ چالان ڈپٹی پراسکیوٹر ارم ریاض نے پیش کیا ،عدالت نے گزشتہ روز وکلاء وفریقین کے دلائل سننے کے بعد مذکورہ مجرم چچا کو 3معصوم بچوں کو قتل کرنے کے جرم میں 3بار سزائے موت اور 3لاکھ روپے جرمانہ جبکہ سلمی کو زخمی کرنے پر 16سال قید اور ڈیرھ لاکھ روپے قصاص زخمی والدہ کو ادا کرنے کا حکم جاری کیاہے۔ ملزم فریادعون اور مجید دونوں سگے بھائی تھے ،ملزم فریادعون کے اولاد نہیں تھی جبکہ دوسرے بھائی کے 3بچے تھے ملزم کو شک تھا کہ سلمی تعویز گنڈے اس کی بیوی پر کرارہی ہے کہ اس کے اولاد نہ ہو اس شک پر اس نے فیصلہ کیا کہ اگر اس کے اولاد نہیں تو بھائی کے گھر بھی اولاد نہیں رہے گی، اس پر ملزم نے رات کے وقت سوتے ہوئے تینوں بچون کو چھری سے ذبع کردیا ماں بچانے کے لئے اٹھی تو اس پر بھی حملہ کرکے اسے شدید زخمی کردیا،شاہدرہ پولیس نے مذکورہ ملزم کے خلاف 2015ء میں مقدمہ درج کیا تھا۔

مزید : صفحہ آخر