تحریک انصاف اور حکومت نے عوام کے جذبات سے کھیلا،سرائیکی رہنما

تحریک انصاف اور حکومت نے عوام کے جذبات سے کھیلا،سرائیکی رہنما

ملتان (سٹی رپورٹر)حکومت اور تحریک انصاف نے مک مکا کرنا تھا تو پورے ملک کو کیوں عذاب سے دو چار کیا ؟ وسیب کے لوگ کرسی و اقتدار کی سیاست کرنیوالوں کو چھوڑ کر سرائیکی صوبے کیلئے جدوجہد کریں۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستان قومی کونسل کے رہنماؤں پروفیسر شوکت مغل(بقیہ نمبر10صفحہ12پر )

، ظہور دھریجہ اور مسیح اللہ خان جامپوری نے کارکنوں کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف اور حکمران جماعت کی طرف سے کئی ہفتوں سے اعصاب شکن صورتحال پیدا کی گئی اور عوام کے جذبات سے کھیلا گیا ، کروڑوں افراد سخت مشکلات کا شکار ہوئے ، اس کا حساب کون دے گا؟ انہوں نے کہا کہ نام نہاد دھرنے سے جو نقصان ہوا تو اس کے ذمہ داروں کے تعین کیلئے عدالتی کمیشن قائم کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ دھرنے کے دوران خیبرپختونخواہ کے وزیراعلیٰ پشتون ازم کی بات کی جبکہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے خود کو سرائیکی کہنے کی بجائے پنجابی کہا ، یہ سرائیکی وسیب کے جاگیر داروں و گدی نشین سیاستدانوں کی ذہنی پسماندگی اور اپنی ماں دھرتی اور ماں بولی سے غداری ہے ۔ اس سے کروڑوں افراد کی دل آزاری ہوئی ، وہ قوم سے معافی مانگیں اور آئندہ کیلئے توبہ کریں ۔ پاک چائنا راہداری منصوبے سے سرائیکی وسیب کو آؤٹ کر دیا گیا ہے۔ ملتان میٹرو فیز ٹو کا منصوبہ کھٹائی میں ڈال دیا گیا ہے اور فیز ون بھی محض دو ارب کی وجہ سے چھ ماہ سے لٹکا ہوا ہے ، اسی طرح ایم ڈی اے تا چوک دیرہ اڈہ دو رویہ سڑک کا منصوبہ کینسل کر دیا گیا اور یہ بھی اپنی جگہ المیہ ہے کہ وسیب میں لوگ بے روزگاری سے خودکشیاں کر رہے ہیں جبکہ میٹرو افسران اور اہلکار لاہور سے تعینات ہو کر پہنچ رہے ہیں۔میٹنگ میں سرائیکی شاعر بلال بزمی ، حاجی عید احمد، عامر چوہدری ،عابد سیال ،طیب سیال ،عادل جہانگیر اور دوسرے موجود تھے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر