پولیس اہلکاروں کی شیخ رشید کیساتھ سیلفیاں بنانے کی کوشش، پھر عوامی مسلم لیگ کے سربراہ نے ایسا جواب دیا کہ ہر کوئی ہنس ہنس کر لوٹ ہوگیا

پولیس اہلکاروں کی شیخ رشید کیساتھ سیلفیاں بنانے کی کوشش، پھر عوامی مسلم لیگ ...
پولیس اہلکاروں کی شیخ رشید کیساتھ سیلفیاں بنانے کی کوشش، پھر عوامی مسلم لیگ کے سربراہ نے ایسا جواب دیا کہ ہر کوئی ہنس ہنس کر لوٹ ہوگیا

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید مسلم لیگ ن پر تنقید کے حوالے سے تو بہت مشہور ہیں لیکن لوگ انہیں چلبلے سیاسی جملے بولنے پر بھی بہت پسندکرتے ہیں اور اسی وجہ سے میڈ یا کے جس پروگرام میں شیخ رشید ہوں اس کی ریٹنگ آسمانوں کو چھونے لگتی ہے ۔ایسے ہی چلبلے اور ہنسی سے بھر پور جملوں کا تبادلہ گزشتہ روز شیخ رشید اور پولیس کے درمیان اس وقت ہوا جب وہ سپریم کورٹ پہنچے۔

’عمران خان کی جرات اور بہادری کو سلام‘ وزیردفاع نے عجیب بات کہہ دی

شیخ رشید سپریم کورٹ گئے تو پولیس اہلکاروں نے ان کے ساتھ سیلفیاں لینا شروع کردیں ،پولیس والوں کو ایسا کرتا دیکھ کر شیخ رشید بولے کہ اگر معطل ہو گئے تو پھر شکایت نہ کرنا ۔شیخ رشید کے اس جملے پر پولیس والے خوب ہنسے اور جواباً کہا کہ پہلے کونسا ہمیں پھول لگے ہوئے ہیں ۔پولیس اہلکار دوبارہ سیلفیاں لینے میں مصروف ہو گئے تو شیخ رشید نے کہا کہ مجھے پکڑ کر ڈنڈے سر پر نہ مارنا ،ٹانگوں پر ہی مار لینا ۔پولیس والے شیخ رشید کے منہ سے یہ الفاظ سن کر پہلے تو ہکا بکا رہ گئے اور پھر انہوں نے ہنسنا شروع کردیا ۔

مزید : اسلام آباد