عدالتی فیصلہ حکمران خاندان کے حق میں آ گیا تو یوم تشکر کا کیا بنے گا؟وزیر اعظم مستعفی ہو کر اپنی پوزیشن کلئیر کرتے تو اچھا اور باوقار راستہ تھا :منظور وٹو

عدالتی فیصلہ حکمران خاندان کے حق میں آ گیا تو یوم تشکر کا کیا بنے گا؟وزیر ...
عدالتی فیصلہ حکمران خاندان کے حق میں آ گیا تو یوم تشکر کا کیا بنے گا؟وزیر اعظم مستعفی ہو کر اپنی پوزیشن کلئیر کرتے تو اچھا اور باوقار راستہ تھا :منظور وٹو

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب میاں منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ وزیر اعظم مستعفی ہو کر عدالت میں اپنی پوزیشن واضح کرتے تو یہ اُن کے لئے زیادہ باوقار راستہ تھا،عدالتی فیصلہ حکمران خاندان کے حق میں آ گیا تو یوم تشکر کا کیا بنے گا۔

نجی ٹی وی کے مطابق منظور وٹو کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کا یوم تشکر منانے کا کوئی جواز نہ تھا، اس وقت سیاسی قائدین کو انتہا پسندی کی بجائے اعتدال اور بردباری کا راستہ اختیار کرنا چاہیے، پاکستان کے عوام کرپشن کو برداشت کرنے کو تیار نہیں،قوم اپنے لیڈروں کو صاف ستھرا، ایماندار اور سچا دیکھنا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی نے پاناما لیکس اور حکمرانوں کی کرپشن کے خلاف پارلیمنٹ میں نہایت موثر کردار ادا کیا ہے ،ضرورت پڑی تو پیپلز پارٹی کے کارکنان سڑکوں پر بھی آنے کو بے تاب اور جدوجہد کرنے کو تیار ہیں۔

مزید : لاہور