تمام موضع جات کی لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائز یشن مکمل کی جائے، کامران بنگش

    تمام موضع جات کی لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائز یشن مکمل کی جائے، کامران بنگش

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش کی زیرصدارت لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کے حوالے جائزہ اجلاس جمعہ کو سول سیکرٹریٹ میں ہوا، جس میں لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کے پراجیکٹ ڈائریکٹر خالد خان سمیت دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی۔ لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن پر اب تک ہونے والے پیش رفت سے پراجیکٹ ڈائریکٹر خالدخان نے معاون خصوصی کو آگاہ کیا۔اس موقع پر کامران بنگش نے لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کے حوالے سے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ پراجیکٹ عوامی مفاد میں انتہائی اہم ہے اسی لئے جتنا جلد ہو سکے اسی بارے کام تیز کیا جائے کیونکہ اس سے ایک جانب صوبہ میں ڈیجیٹلائزیشن کو فروغ حاصل ہوگا تو دوسری جانب پٹواری مافیا سے نجات بھی ملے گا۔ لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن ایک مشکل اور پیچیدہ عمل ہے لیکن پشاور کے تمام موضع جات کا لینڈ ریکارڈ جون 2020 تک ڈیجیٹلائز کیا جائے۔ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش نے مزید کہا کہ وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ محمود خان لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن میں خصوصی دلچسپی لے رہے ہیں، تاکہ عو ام سے کئے وعدے جلد از جلد ایفاء ہوں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...