زمین کی رجسٹریشن میں بے ضابطگیا ں، اینٹی کرپشن نے تحقیقات کا آغاز کردیا

زمین کی رجسٹریشن میں بے ضابطگیا ں، اینٹی کرپشن نے تحقیقات کا آغاز کردیا

  



لاہور(اپنے نمائندے سے)اختیارات کا ناجائز استعمال، جعلسازی فراڈ، اور سرکاری فیس غبن کرنے کا الزام، رجسٹریشن برانچ اقبال ٹاؤن، اراضی ریکارڈ سنٹر سٹاف سمیت مفادکنندگان کے خلاف محکمہ اینٹی کرپشن نے تحقیقات کا آغاز کر دیا، تحصیل رائے ونڈ کے موضع خورد پور میں واقع21کروڑ مالیتی انڈسٹری شدہ میڈیسن فیکٹری کو زرعی زمین ظاہر کرتے ہوئے رجسٹری محررکی معاونت سے رجسٹری بھی پاس کروا لی گئیں، فارما کمپنی کے چیف ایگزیکٹو نے رجسٹریشن برانچ کے اہلکاروں کی ساز باز سے 2016 کے بعد 2019 میں دومرتبہ سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچاتے ہوئے مفاد حاصل کیا، درخواست گزار نے شواہد اینٹی کرپشن کے حوالے کر دئیے سائل نور حسین گوندل کی درخواست پر محکمہ اینٹی کرپشن حرکت میں آگیا، مفاد کنندہ سمیت تمام سرکاری ملازمین کے خلاف تحقیقات کا آغاز کردیا گیا،ڈائریکٹر اینٹی کرپشن احمد فنان کاکہنا ہے کہ سرکاری خزانے کا نقصان پورا کرائیں گے اورالزام ثابت ہونے کی صورت میں سخت کارروائی کی جائے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...