استحکام معیشت کیلئے حکومتی کوششیں تسلیم، پاکستان میں ملازمتوں، شرح نمو میں اضافے کیلئے اصلاحات ضروری: صدر ورلڈ بینک گروپ

استحکام معیشت کیلئے حکومتی کوششیں تسلیم، پاکستان میں ملازمتوں، شرح نمو میں ...

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) ورلڈ بینک نے کہا ہے پاکستان کی جانب سے کاروباری اصلاحات سے روزگار کے مواقع پیدا ہونگے، سرمایہ کاری کے رحجان میں اضافہ ہوگا، ٹیکسوں سے زیادہ آمدنی ہوگی۔رپورٹ کے مطابق ورلڈ بینک گروپ کے صدر ڈیوڈ آر میلپاس نے کاروبار کیلئے سازگار ماحول فراہم کرنے سے متعلق عالمی انڈیکس پر بہترین درجہ بندی پر حکومت کی کوششوں کو سراہا۔انہوں نے کہاگزشتہ برس پاکستان 136 واں سے 108 ویں نمبر پر آگیا، نئے کاروبار کیلئے کی گئی اصلاحات، بجلی اور تعمیراتی اجازت ناموں کے حصول، جائیداد کے اندراج، ٹیکسوں کی ادائیگی اور سرحد پار تجارت کرنے سے ماحول بہترہوا۔ پاکستان اپنے عدالتی نظام میں بہتری، نوجوانوں کی استعداد کار بڑھانے اور خواتین کو بااختیار بنا کر کاروبار میں مزید بہتری و آسانی لاسکتا ہے،انہوں نے سرماریہ کاروں کا اعتماد جیتنے کیلئے نظام کو مزید ڈیجیٹلائزیشن بنانے پر زور دیا۔ڈیوڈ آر میلپاس نے کہا عالمی بینک، پاکستان کو کامیاب بنانے کیلئے سنجیدہ کوشش کرے گا کیونکہ ملک میں مزید اصلاحات اور چیلنجز سے نمٹنے کی صلاحیت موجود ہے۔علاوہ ازیں ڈیوڈ آر میلپاس نے وزیر اعظم کی جانب سے حکومت کے مختلف اہم منصوبوں میں ذاتی دلچسپی لینے پر ان کے اقدام کی تعریف کی۔انہوں نے معاشی تبدیلی، اخراجات میں کمی اور معیشت کے اہم شعبوں میں اصلاحات لانے کیلئے حکومت کی کوششوں کو بھی تسلیم کیا۔علاوہ ازیں تربیلا ڈیم کے دورے پر ورلڈ بینک گروپ کے صدر ڈیوڈ آر میلپاس نے فورتھ ایکسٹنشن ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی تکمیل پر بھی اطمینان کا اظہار کیااور کہا منصوبے پر کام متاثر کن ہے۔تربیلا ڈیم منصوبے کا دورہ کرنے کے بعد بریفنگ میں انہوں نے کہا میں مقررہ وقت اور تخمینے کی لاگت سے کم لاگت پر منصوبے کی تکمیل پر خوش ہوں۔

صدر ورلڈ بینک

مزید : صفحہ اول


loading...