ٹرینوں میں دھماکہ خیز موادلے جا نے پرپابندی 

     ٹرینوں میں دھماکہ خیز موادلے جا نے پرپابندی 

  



لاہور(لیڈی رپورٹر)ریلو ے انتظا میہ نے گز شتہ روز ہو نے والے ٹرین حا دثے کے بعد نئے احکا ما ت جاری کر دئیے ہیں۔ جس کے مطابق ریلوے کے ایکٹ 1890کے سیکشن 59(1) کے  تحت  کوئی  مسافر یا ریلوے ملازم ٹرین میں سفر کے دوران کوئی خطرناک یا جارحانہ سامان نہیں لے کر جا سکتا۔ اس کے علاوہ کوچنگ ٹیرف (ii)کے آرٹیکل 6.5کے تحت کوئی بھی دھماکہ خیز مواد، خطرناک یا جلا دینے والا سامان لیگج وین میں بْک نہیں کروا یا جا سکتا۔ رولنگ سٹاک اور مسافروں کی حفاظت کے پیش نظر یہ ہدایات پاکستان ریلوے کے ٹائم اور فیئر ٹیبل میں واضح طور پر شائع کی جاتی ہیں۔ حفاظتی سیکشن کے کلاز 2 کے تحت ٹرین میں چولہا جلانا یا کسی قسم کی لائیٹ جلانا نہ صرف مسافروں کے لئے نقصان دہ ہے بلکہ ریلوے املاک کے لئے بھی بہت بڑے نقصان کا باعث بن سکتا ہے۔ ماضی میں اس طرح کی پر یکٹس کرنے سے بہت سے لوگوں کی زندگی کا نقصان ہوا، کئی مسافر زخمی ہوئے اور ریلوے کی کوچز کا بھی کافی نقصان ہوا۔ اس حوا لے سے پا کستان سے گفتگو کر تے ہو ئے تر جما ن ریلوے کا کہنا تھا کہ ہما ری مسافروں سے درخواست کی جاتی ہے کہ یہ مسافروں کے اپنے مفاد میں بھی بہتر ہو گا کہ نہ وہ خود کوئی جلنے والی چیز ٹرین میں لے کر جائیں اور نہ ہی کسی دوسرے مسافر کو آئل چولہا وغیرہ لے جانے کی اجازت دیں کیونکہ یہ نہ صرف خطرناک ہوگا بلکہ ریلوے ایکٹ کے خلاف ہو گا۔ اْوپر دی گئی ہدایات کی خلاف ورزی پر ہماری جانیں خطرے میں پڑ سکتی ہیہ معزز مہمانوں سے خوش اخلاق رویہ رکھیں۔انہو ں نے کہا کہ لیے آج  ڈویڑنل آفیسران کی اسپیشل ڈیوٹی لگا ئی گئی ہیں اور آنے والے معزز مہمانوں کی سہولیات کا خاص خیال رکھا جائے کسی قسم کی کوتاہی پر کوئی سمجھوتا نہیں ہو گا تمام آفیسر اپنے ذمہ داریاں احسن طریقے سے نبھائیں۔ ڈیوٹی افسر ان میں ڈویژنل میڈیکلل آفیسر، ڈویڑنل میکینکل انجینئر، ڈویڑنل انجینئر اور ڈویڑنل سگنل شامل ہیں۔ تمام آفیسر 3 اکتوبر بروز اتوار صبح 8 بجے سے لے کر سپیشل گاڑیوں کی روانگی تک وہاں پر موجود رہیں گے۔

ترجمان ریلوے

مزید : صفحہ اول


loading...