نواز شریف کے ذاتی معالج اور میڈیکل بورڈ کی رپورٹ میں تضاد

نواز شریف کے ذاتی معالج اور میڈیکل بورڈ کی رپورٹ میں تضاد
نواز شریف کے ذاتی معالج اور میڈیکل بورڈ کی رپورٹ میں تضاد

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)نواز شریف کی صحت کے حوالے ان کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کے بیانات اور میڈیکل بورڈ کی رپورٹ میں تضاد پایا گیا ہے۔

نجی ٹی وی چینل ہم نیوزکے مطابق نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان اور میڈیکل بورڈ کے بیانات میں تضاد پایا گیا ہے ،ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے نوازشریف کی حالت انتہائی تشویشناک قرار دی تھی جبکہ میڈیکل بورڈ نے نوازشریف کی حالت بہتربتائی ہے،میڈیکل بورڈ کے مطابق نوازشریف کے خون کے خلیے 3جگہ بھجوا کر پلیٹ لیٹس کا تعین کیا جاتا ہے،سروسز اسپتال نے نوازشریف کے پلیٹ لیٹس کی تعداد 55ہزار بتائی ہے جبکہ ذاتی معالج نے پلیٹ لیٹس تعداد 38 ہزار بتائی تھی۔

مزید : قومی


loading...