گو نواز گو کے نعرے لگانے والوں پر لیگی ایم پی اے کا تشدد

گو نواز گو کے نعرے لگانے والوں پر لیگی ایم پی اے کا تشدد

  

وزیرآباد(نامہ نگار) وزیرآباد میں امدادی سامان نہ ملنے پر سیلاب متاثرین کی جانب سے گونوازگو کے نعرے لگانے پر مسلم لیگ(ن) کے رکن پنجاب اسمبلی توفیق بٹ ،مقامی صدر مانی بٹ اور کارکنوں نے متاثرین کی پٹائی کردی۔ میڈیارپورٹ کے مطابق وزیراعظم نوازشریف گوجوانوالہ کی تحصیل وزیرآباد میں سیلاب متاثرین میں امداد تقسیم کرنے کے بعد جیسے ہی روانہ ہوئے تو متاثرین نے وزیرآباد روڈ پر احتجاج شروع کردیا اور اس دوران ان کی جانب سے گونوازگو کے نعرے بھی لگائے جس پر مسلم لیگ (ن)کے رکن پنجاب اسمبلی توفیق بٹ اور مقامی صدر مانی بٹ سیخ پا ہوگئے اور انہوں نے احتجاج کرنے والوں ہلہ بول کر مکوں اور گھونسوں کی برسات کردی۔ لیگی رہنماو¿ں کی جانب سے احتجاج کرنے والوں کی پٹائی کے دوران وہاں پولیس کی بھاری نفری موجود تھی تاہم انہوں نے توفیق بٹ اور مانی بٹ سمیت کسی کو بھی روکنے کی کوشش نہ کی۔ احتجاج کرنے والے سیلاب متاثرین نے کہاکہ انتظامیہ نے ان کا نام متاثرین کی فہرست سے نکال کر اپنے عزیز واقارب کا نام شامل کردیا اور ہمیں اندر جانے ہی نہیں دیا گیا، متاثرین کے مطابق رکن پنجاب اسمبلی توفیق بٹ اور مانی بٹ کی جانب سے انہیں دھمکی دی گئی ہے کہ اگر آئندہ انہوں نے گونوازگو کا نعرہ لگایا تو وہ انہیں جوتوں سے ماریں گے۔ دوسری جانب توفیق بٹ نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نعرے لگانے والے متاثرین سیلاب نہیں بلکہ تحریک انصاف کے کارکن تھے۔ انہوں نے کہاکہ امداد کی تقسیم کے دوران کسی شخص نے کوئی اعتراض نہیں کیا اور بڑے پرامن طریقے سے وزیراعظم نواز شریف امداد تقسیم کرنے کے بعد وہاں سے روانہ ہوئے لیکن باہر نکلنے کے بعد تحریک انصاف کے کارکنوں کی جانب سے یہ ڈرامہ کیا گیا۔

 گونوازگو

مزید :

صفحہ اول -