صوبائی دارالحکومت میں گیس کی شدید قلت ، صارفین سراپا احتجاج

صوبائی دارالحکومت میں گیس کی شدید قلت ، صارفین سراپا احتجاج

  

لاہور ( خبرنگار) گیس فیلڈز سے گیس کی بندش کے باعث گھریلو سیکٹر بری طرح متاثر ہو کر رہ گیا ہے۔ لاہور میں گزشتہ روز بھی صارفین گیس کی شدید قلت کے خلاف سراپا احتجاج بنے رہے ہیں جبکہ اس کے علاوہ صوبے کے دیگر شہریوں میں بھی گیس کی سپلائی میں 30 سے 40 فیصد کمی کے بارے ریکارڈ ظاہر کیا گیاہے۔ ”پاکستان“ کو گیس کمپنی کے ذرائع سے گیس سپلائی اور ڈیمانڈ کے حوالے سے ملنے والی تفصیلات کے مطابق چار گیس فیلڈز کی سالانہ مرمت کے ساتھ ساتھ مزید چار گیس فیلڈز سے سالانہ مرمت کے نام پر سپلائی بند کی جا رہی ہے جس کے بعد گیس کی شدید قلت گیس بحران میں تبدیل ہو سکتی ہے۔ دوسری جانب گیس فیلڈز سے سپلائی کی بندش پر گزشتہ روز بھی صارفین سراپا احتجاج بنے رہے ہیں۔ لاہور میں صارفین کو گیس کی چھ سے آٹھ گھنٹے تک گیس کی شدید قلت سکا سامنا کرنا پڑا ہے اور گیس نہ ملنے پر صارفین ایل پی جی کا استعمال کرتے رہے ہیں ۔ دوسری جانب گیس کی شدید قلت پر گیس کا شارٹ فال 800 سے 900 ملین کیوبک فٹ تک پہنچ گیا ہے۔ اس حوالے سے گیس حکام کا کہنا ہے کہ گیس فیلڈز سے سپلائی معطل ہونے پر سپلائی میں شدید کمی کا سامنا ہے جس کے باعث صنعتوں اور سی این جی کو گیس کی سپلائی معطل رکھی جا رہی ہے ، تاہم عید الاضحی کے دنوں میں صارفین کو سی این جی فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور عید پر تین دن کے لئے صارفین کو سی این جی فراہم کی جائے گی ۔ اس حوالے سے سمری حومت کو بھجوا دی گئی ہے جس کے بارے اگلے دو دنوں میں صارفین کو باقاعدہ آگاہ کر دیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ آخر -