کراچی کے عو ام زہریلاپانی پینے پر مجبور ہیں ، حلیم عادل شیخ

کراچی کے عو ام زہریلاپانی پینے پر مجبور ہیں ، حلیم عادل شیخ

  

لاہور(جنرل رپورٹر) پاکستان ریلیف فاﺅنڈیشن کے چیئرمین حلیم عادل شیخ نے کہا کہ کراچی،نوری آباد،ٹھٹھہ کی اڑھائی کروڑ عوام کو صاف پانی کی فراہمی کے لیے عدالتوں سے انصاف ملنامشکل ہوگیا ہے،ڈیڑھ سال سے اس مشن کو لیکر چل رہے ہیں سندھ ہائی کورٹ میں میں پٹیشن بھی دائر کی سابق صدر،وزیراعلی سندھ اور دیگر طاقتور شخصیات کو خطوط لکھے مگر ایک سال سے زائد عرصہ گزرنے اورآج بھی تاریخ ملنے کے باوجود ہماری شنوائی نہ ہوئی ہے لگتا ہے کہ حکومت اور عدالتوں کی نظر میںعوام کی صحت کامعاملہ کوئی اہمیت نہیں رکھتا ہے اس لیے اب ہم نے عوامی عدالت میں جانے کا فیصلہ کرلیا ہے ،لہذا عوام کوز ہریلے پانی کی سپلائی کو رکوانے کے لیے جمعہ کے روز ہم متاثرہ عوام کے ساتھ حیدرآباد جامشورو پل پر علامتی دھرنا دینگے ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے سندھ ہائی کورٹ کے باہر میڈیاسے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔تفصیلات کے مطابق حلیم عادل شیخ نے کہا کہ ہم نے 2013میں ہائی کورٹ میں کینجھر جھیل کو بچانے کے لیے پٹیشن دائر کی تھی مگر افسوس ہماری باقاعدہ طور پر ہائیرنگ شروع بھی نہ ہوسکی ہے کراچی ،نوری آباد اور ٹھٹھہ کی اڑھائی کروڑ ایک طویل عرصہ سے صنعتی اور گھریلوفضلے سے ملاوٹ شدہ پانی پینے پر مجبور ہیں ،جس کی وجہ سے کیڈیم ،کرومیم ،مرکری سائینایڈ جیسے خطرناک وائرس موجود ہیں جو ہیپاٹائٹس ،جلدی امراض ،ڈائیریا ،اور آنکھوں کی بینائی ختم کرنے کا سبب بن رہے ہیں جبکہ اس زہریلے پانی کو پینے کے سبب کینسر جیساموذی امراض تیزی سے پھیل رہا ہے۔ منچھر جھیل اور حمل جھیل تو پہلے ہی حکومتی نااہلی کی وجہ سے تباہ ہوچکی ہے،اب میٹھے پانی کا واحد زریعہ کینجھر جھیل بھی تباہی کے دہانے پر پہنچ چکا ہے جبکہ حکومت کی جانب سے پانی کو صاف کرنے کے لیے 73کروڑ روپے کی لاگت سے جو ٹریٹمنٹ پلانٹ بنایا گیا تھا وہ بھی ابھی تک بند پڑا ہے ۔اس موقع پر ان کے ہمراہ مسلم لیگ سندھ یوتھ ونگ کے صوبائی صدر آغا رفیع اللہ ،وکلاءلائر ونگ کی ٹیم سراج منگی ایڈوکیٹ ،ندیم منگی ایڈوکیٹ ،سجاد احمد ایڈوکیٹ جبکہ ،مرزاعظیم بیگ ،جاوید اعوان ،شیخ اقبال سمیت دیگر رہنما بھی موجود تھے۔

مزید :

صفحہ آخر -