نوجوان لڑکے ،لڑکیوں کو نشے کے استعمال سے روکنا ہو گا،ذو الفقار حسین

نوجوان لڑکے ،لڑکیوں کو نشے کے استعمال سے روکنا ہو گا،ذو الفقار حسین

  

لاہور(پ ر)منیشات کے رحجان کو ختم تو نہیں کیا جا سکتا بلکہ کم کرنے کے لیے پروفیشنل ازم اور معلومات پر مبنی جدید اور ٹھوس تحقیق کو اپنا کر مشکلات میں مبتلا خاندانوں کو خوشیاں ضرور د ی جا سکتی ہیں نشہ کے استعمال کو روکنے کے لیے نوجوان لڑکے اور لڑکیوں کو سختی سے منع کرنا ہو گا حکومتی ادارے بہتر منصوبہ بندی کریں تو یقیناًمنشیات کے استعمال کو کم کیا جا سکتا ہے بین ا لاقوامی معلومات سے استفادہ ضروری ہے لیکن ہمیں اپنے حالات اور مقامی تقاضوں کو مد نظر ر کھ کر منشیات کے خلاف پالیسی بنانا ہو گی ان خیالات کا اظہار کنسلٹنٹ انسداد منیشات مہم سید ذوالفقار حسین نے ڈرگ ایڈوائزری ٹریننگ سنٹرعلامہ اقبال روڈ لاہور میں منشیات کے خلاف پروفیشنل کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہی اس موقعہ پر سائیکالوجسٹس قدسیہ نوشین، ندا سیہل، سیکرٹری ملک جاوید اقبال اور دوسرے افراد نے شرکت کی۔

ا جلاس میں میں اس بات پر زور دیا گیا کہ تعلیمی اداروں کے طلبہ وطالبات کو ایسی ریسرچ میں ضرور شامل کیا جائے جو مستقبل میں اس کو پروفیشنل بنانا چاہتے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -