ٹماٹر ،پیاز ،ادرک اور لہسن کی قیمتوں میں 40فیصد اضافہ

ٹماٹر ،پیاز ،ادرک اور لہسن کی قیمتوں میں 40فیصد اضافہ

  

                                       لاہور ( لیاقت کھرل) صوبائی دارالحکومت میں قائم منڈیوں میں سبزیوں اور پھلوں کی منصوعی ذخیرہ اندوزی ، قیمتوں کے ریٹس مقرر کرنے میں بڑے پیمانے پر لوٹ مار کا انکشاف، آڑھتیوں نے ضلعی انتظامیہ اور مارکیٹ حکام سے ” اندر کھاتے“ رابطوں کو تیز کردیا ہے، عبدالاضحی پر مصنوعی قلت پیدا کر کے سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں کے بوگس ریٹ مقرر کر کے شہریوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے کا ” پلان“ تیار کر لیا گیا ہے، جس میں عید سے قبل ہی پیاز، ادرک، لہسن اور ٹماٹر کی مصنوعی قلت پیدا کر دی گئی ہے اور 30 سے 40 فیصد ریٹ بڑھا کر لوٹ مار شروع کر دی گئی ہے ” پاکستان“ نے منڈیوں اور مارکیٹوں سمیت بازاروں میں سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں کا جائزہ لینے کے حوالے سے ایک رپورٹ تیار کی جس میںانکشاف ہوا ہے کہ آڑھتیوں نے عید پر منڈیوں میں مصنوعی ذخیرہ اندوزی پیدا کرکے بڑے پیمانے پر لوٹ مار کا پروگرام بنا لیا ہے اس میں سبزیوں اور پھلوں کی مصنوعی ذخیرہ اندوزی کی جائے گی جس میں مارکیٹ کمیٹی اور ضلعی حکام سے مبینہ طور پر ساز باز کی جائے گی اور پھلوں اور سبزیوں کے اپنی مرضی کے ریٹ مقرر کئے جائیں گے ا ذرائع کا کہنا ہے کہ بکرا عید سے قبل ہی اس فارمولے پر عمل کرنا شروع کر دیا گیا ہے جس کے باعث پیاز ، ادرک ، ٹماٹر اور لہسن کی قیمتوں میں 30 سے 40 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے اور ایسے محسوس ہو رہا ہے کہ عیدالاضحی پر پیاز اور ادرک ، ٹماٹر اور لہسن جیسی مصنوعات نایاب ہو کر رہ جائیں گی، مارکیٹ کمیٹیوں اور منڈیوں کے ذرائع کا کہنا ہے کہ دو اکتوبر یعنی کل سے منڈیوں میں سبزیوں اور پھلوں کی مصنوعی قلت پیدا کر دی جائے گی اور منصوعی ذخیرہ اندوزی کی آڑ میں لوٹ مار کی جائے گی ، چھاپہ مار ٹیمیں محض ” خانہ پری“ کے طور پر کارروائی کریں گی اور اس میں اگلے دو سے تین دن میں پیاز اصل قیمت کی بجائے 40 سے 50 روپے ادرک اصل مقرر کردہ قیمت کے مقابلہ میں 30 سے 50 روپے جبکہ ٹماٹر 40 سے 60 روپے تک اضافی قیمت وصول کرنے کا پلان بتایا گیا ہے اس میں آڑھتیوں نے مارکیٹ کمیٹیوں اور ضلعی حکام کی بھاری کمیشن مقرر کر رکھی ہے جس کے بعد شہریوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا جائے گا اور بکرا عید پر شہری عام مصنوعات پیاز، ادرک، لہسن اور ٹماٹر خرید نہیں سکیں گے اس حوالے سے مارکیٹ کمیٹیوں اور منڈیوں کے ذرائع کا کہنا ہے کہ اس میں آڑھتیوں نے مارکیٹ کمیٹیوں کے ذمہ داروں کو باقاعدہ خرید رکھا ہے جس کے بعد لوٹ مار کا یہ پلان تیار کیا گیا ہے جبکہ اس حوالے سے مارکیٹ کمیٹیوں اور ضلعی حکام کا کہنا ہے کہ اس میں مصنوعی ذخیرہ اندوزی نہیں ہونے دی جائے گی اور بھرپور انداز میں کریک ڈاﺅن کیا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -