پی ٹی سی ایل متاثرہ ٹیلیفون ایکسچینج کی بحالی سنگین مسئلہ بن گئی

پی ٹی سی ایل متاثرہ ٹیلیفون ایکسچینج کی بحالی سنگین مسئلہ بن گئی

  

لاہور (خبرنگار) پی ٹی سی ایل کی متاثرہ ٹیلی فون ایکسچینج کے مواصلاتی نظام سمیت دیگر سہولتوں کی بحالی ایک سنگین صورتحال اختیار کر گئی ہے۔ گزشتہ روز ٹیکنیکل ٹیم کے سربراہ جاوید اسلم نے آتشزدگی کے واقعہ میں نقصان کا ابتدائی تخمینہ اربوں میں ظاہر کیا ہے جبکہ کمرشل ڈیپارٹمنٹ نے پی ٹی سی ایل کے مواصلاتی نظام کی بحالی ، آن لائن سسٹم، انٹرنیٹ اور اے ٹی ایم سمیت یو موبائل فون جیسی اہم سروسز کی بحالی کے لئے محکمہ سے اربوں روپے کے فنڈز طلب کر لئے ہیں۔ پی ٹی سی ایل کی متاثرہ ایکسچینج سے کسی قسم کی مواصلاتی سروس بحال نہ ہونے پر مختلف بینکوں، پاسپورٹ کے ریجنل آفس سمیت مختلف سرکاری و نیم سرکاری اداروں میں کاروباری زندگی گزشتہ روز بھی معطل رہی ہے۔ ٹیکنیکل ٹیم ک کہنا ہے کہ اگر فنڈز کی دستیابی میں تاخیر سامنے آئی تو سرکاری و نجی بینکوں سمیت مختلف اداروں میں آن لائن سسٹم ، انٹرنیٹ اور اے ٹی ایم جیسی سروسز بحال نہیں ہو سکیں گی جس میں عید سے قبل لاکھوں سرکاری ملازمین کی تنخواہیں اور پینشنز جیسی ادائیگیوں کا سلسلہ بھی رک سکتا ہے۔ دوسری جانب پی ٹی سی ایل کی ایکسچینج میں ہونے والی آتشزدگی کے واقعہ کا وزیر اعظم پاکستان نے بھی نوٹس لے لیا ہے اور ایتیصلات کمپنی کے حکام کو عید سے قبل متاثرہ ٹیلی فون ایکسچینج کے مواصلاتی نظام کی بحالی کا ٹاسک دیا ہے اور عید سے قبل تمام بینکوں، پاسپورٹ آفس سمیت مختلف اداروں کے آن لائن سسٹم، اے ٹی ایم اور انٹرنیٹ سروسز کو بحال کرنے کا حکم دیا ہے جبکہ اس کے ساتھ ساتھ ٹیلی فون ایکسچینج سے متاثر ہونے والا ملکی و غیر ملکی مواصلاتی نظام کو بھی اصل حالت میں بحال کرنے کاحکم دیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی سی ایل حکام نے ٹیکنیکل ٹیموں کے دائرہ کار وسیع کردیا ہے اور تمام سروسز کو مرحلہ وار بحال کرنے کا ٹاسک دے دیا گیا ہے جس میں گزشتہ روز پولیس ایمرجنسی 15 کی پچاس میں سے 6 لائنوں کو بحال کر دیا گیا ہے جبکہ جی پی او ،ریلوے، گورنر ہاؤس، ایوان وزیر اعلیٰ اور مختلف بینکوں کے مواصلاتی نظام اور دیگر اہم سروسز کی بحالی کے لئے ٹیمیں آج بھی اپنا کام جاری رکھیں گی۔ پی ٹی سی ایل کی ٹیکنیکل ٹیم کے سربراہ جاوید اسلم کا کہنا ہے کہ سب سے اہم اور پہلا مرحلہ مواصلاتی نظام کی بحالی ہے جس میں 20 سے 25 فیصد کام کو مکمل کر لیا گیاہے اور باقی ٹیکنیکل ورک اگلے تین سے چار دنوں میں مکمل کر لیا جائے گا۔

پی ٹی سی ایل

مزید :

علاقائی -