مسلم ممالک معدنیات کی دولت سے مالا مال لیکن جدید علوم سے دور ہیں،مقصود احمد

مسلم ممالک معدنیات کی دولت سے مالا مال لیکن جدید علوم سے دور ہیں،مقصود احمد

  

لاہور(سٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی لاہورمیاں مقصود احمد نے کہا ہے کہ اس وقت دنیا کے نقشے پر 57مسلم ممالک موجود ہیں اللہ کی زمین پر ایک کونے سے دوسرے کونے تک 3 ارب مسلمان بستے ہیں مسلم ممالک تیل اور معدنیات کی دولت سے مالا مال ہیں لیکن مجموعی طور پر جدید علوم سے دور ہیں سائنس وٹیکنالوجی کی موجودہ ترقی میں ہمارا کوئی حصہ نہیں انھوں نے ان خیالات کا اظہار گزشتہ روز علمائے کرام کے ایک اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیااور کہا کہ شاندار ماضی اتنی بڑی افرادی قوت اور بے پناہ وسائل رکھنے کے باوجود ہم ذلیل وخوار ہورہے ہیں

۔

۔

۔

۔

دنیا بھر میں کسی ایک مذہب کے لوگ آپس میں اس طرح دست گریباں نہیں ہیں جس طرح ایک فرد،ایک رسول اور ایک قرآن کو ماننے والی یہ امت باہم برسر جنگ ہے۔ اس صورت حال سے نکلنے کا راستہ ،امت مسلمہ کی ترقی کا راز کس نکتے میں پنہاں ہے اور مسلمان کس طرح موجودہ ذلت ورسوائی سے باہر نکل سکتے ہیں ان مسائل کا حل مسلم ماہرین تعلیم ،اساتذہ ، علماءاور دانشوروں کو اپنی علمی سطح بلند کرکے کرنا ہوگی اور میانہ روی کو اپنانا ہوگا ۔

انھوں نے کہاکہ میانہ روی اور اعتدال پسند اسلامی تعلیمات کا تقاضا نبی آخر الزماں ﷺکی سنت ہے۔ مسلمانوں کے عروج وزوال کی داستان غریب وسادہ ہونے کے ساتھ ساتھ سبق آموز اور تکلیف دہ بھی ہے کئی سالوں سے مسلمانوں پر الزامات کا ایک ایسا سلسلہ شروع ہوا جو تاحال جاری ہے۔ ایک پر امن امت کو دہشت گرد، مسلمانوں کو ایک رجعت پسند اور متشدد قوم ثابت کرنے کی کوشش کی جارہی ہے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -