ہمیں کشکول کے طعنے، خود خیبر پختونخوا حکومت قرضوں پر چلا رہے ہیں احسن اقبال

ہمیں کشکول کے طعنے، خود خیبر پختونخوا حکومت قرضوں پر چلا رہے ہیں احسن اقبال ...

  

                    اسلام آباد(اے این این) وفاقی وزیر منصوبہ بندی ، ترقی و اصلاحات احسن اقبال نے کہاہے کہ عمران کی چین مخالف سیاست کے باوجود اقتصادی راہداری منصوبہ مکمل کرینگے، چینی صدر کا دورہ ملتوی ہونے سے 34 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری میں رخنہ پڑا، تحریک انصاف اور عوامی تحریک عید کی خوشی میں قوم کیلئے دھرنا ختم کردیں، ہم مذاکرات کی پھر پیشکش کرتے ہیں، نعروں سے حکومت نہیں جاتی دھرنا برائے نام رہ گیا، رات کو ”نائٹ برڈز“ آتی ہیں، طاہر القادری کی پالیسی قدرے بہتر ہوئی ہے، عمران کی قسمت میں اگر سڑک پر ہی بیٹھنا لکھا ہے تو ہمیں اعتراض نہیں، ہمیں کشکول کے طعنے دینے والے خود صوبائی حکومت قرضوں پر چلا رہے ہیں، کیا خیبرپختونخوا میں یکساں نظام تعلیم آگیا؟، عمران حب الوطنی اور پاک دامنی کے ٹھیکیدار نہ بنیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کی شام یہاں پی آئی ڈی میں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ پی آئی او راﺅ تحسین بھی ان کے ہمراہ تھے ۔ احسن اقبال نے کہا کہ عمران خان کنٹینر سے ٹی وی انٹرویو سے عوام کو گمراہ کررہے ہیں حقائق کوڑ مروڑ کر پیش کرتے ہیں لگتا ہے پورے پاکستان میں ان کے سوا تمام لوگ کرپٹ ہیں۔ وہ حب الوطنی اور ایمانداری کے ٹھیکیدار بنے ہوئے ہیں ۔ وہ عدلیہ ، حکومت، میڈیا کو بدعنوان کہتے ہیں۔ روزانہ کسی ادارے کی پگڑی اچھالتے ہیں۔ پارلیمنٹ کو بدنام کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے پاکستان کو چوروں کا ملک قرار دیدیا ہے۔ عمران نے الزام لگایا ہے کہ حکومت نے صحافیوں میں ڈھائی ارب روپے تقسیم کیے ہیں۔ آئی بی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ہے ۔ عمران بھولے ہیں یا بھولا بنا رہے ہیں۔ کے پی کے حکومت کروڑوں ڈالر کے بیرونی قرضوں پر چل رہی ہے ، یو ایس ایڈ سے امداد لی جاتی ہے۔ صوبائی حکومت تو قرضوں پر چلا رہے ہیں اور ہمیں طعنے دئیے جاتے ہیں۔ ہر غیر ملکی امداد کا منصوبہ سی ڈی ڈبلیوپی اور اکنک کے اجلاس سے منظور ہوتا ہے کے پی میں 6 ہزار نجی 35 ہزار سرکاری سکول ہیں کیا وہاں یکساں نظام تعلیم آگیا ہے؟ تعلیم کے نام پر کے پی کے میں فنڈ ریزنگ شروع کردی گئی ہے کیونکہ عمران فنڈ ریزنگ کے ماہر ہیں ۔ شہباز شریف نے 4 ہزار سکولوں میں لیبارٹریاں قائم کی ہیں اور 25 ہزار سائنس ٹیچرز بھرتی کیے ہیں۔ ہم نے طلباء کو مفت لیپ ٹاپ دئیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی پارٹی الیکشن میں بڑی دھاندلی ہوئی تھی اور پیسہ چلایا گیا کیا ڈیڑھ سال میں پارٹی الیکشن کی دھاندلی پر نہ کوئی ایکشن لیا جو شخص پارٹی الیکشن میں دھاندلی نہیں روک سکتا وہ ملک کے عام انتخابات پر کیسے انگلی اٹھا سکتا ہے۔ پارٹی الیکشن میں ٹکٹیں فروخت کی گئیں ۔ انہوں نے کہا کہ سٹیٹ بنک اور آئی بی اے نے سروے میں واضح کردیا ہے کہ دھرنوں سے معیشت کو بہت نقصان ہوا ہے۔2012ءکے بعد قومی معیشت کو سب سے زیادہ نقصان ہوا ہے۔ عمران خان انٹی چائنا سیاست کررہے ہیں انہوں نے چینی صدر کادورہ ملتوی کردیا اور سرمایہ کاری رکوادی ۔ ہم اس کے باوجود چین سے سرمایہ کاری جاری رکھیں گے ۔ چین کے 34 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کو 7 فیصد قرضہ بولا گیا۔ ہم پاک چین اقتصادی راہداری ہر صورت مکمل کریں گے۔ احسن اقبال نے کہا کہ پی ٹی آئی کا رویہ غیر مناسب جارحانہ ہے منفی سیاست کررہے ہیں ۔ طاہر القادری کی پالیسی میں قدرے بہتری آئی ہے اور ان میں ٹھہراﺅ آگیا ہے ۔ ہم اپیل کرتے ہیں کہ عید پر دھرنے ختم کردئیے جائیں تاکہ پنڈی اسلام آباد کے شہریوں کی عید نہ خراب ہو ہم دونوں جماعتوں کو پھر سے مذاکرات کی پیشکش کرتے ہیں۔ عید پر بڑے جلسے کی صورت میں ہمیں حفاظتی اقدامات کرنے پڑیں گے۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا تعلق دھرنے سے نہیں ہے ۔ عمران خان کیلئے یہی سزا کافی ہے کہ وہ عید بھی دھرنا میں کریں ۔ دھرنا تو نام نہاد ہے رات کو نائٹ برڈز آتی ہیں ، میلہ سجتا ہے ، رقص ہوتا ہے ، دھمال ڈلتی ہے ، لانگ مارچ کی سازش راول پل پر ہی ناکام ہوگئی تھی ۔ عوام نے دھرنا سیاست مسترد کردی ہے۔ یہ لوگ 30,25 لاشوں کی سیاست کرنا چاہتے تھے ان کے مقدر میں اگر سڑک پر ہی بیٹھنا ہے تو بیٹھے ر ہیں۔ نعروں سے حکومت نہیں جاتی ۔ ہم بھی اپنے کارکنوں کو تقاریب میں نعروں کا حکم دے سکتے ہیں یہ بات سراسر جھوٹ ہے کہ ہم نے ایک سال میں 52 ارب ڈالر قرض لیا ہے۔

احسن اقبال

مزید :

علاقائی -