کشمیر پر اپنے موقف سے پیچھے نہیں ہٹے ،پولیو وائرس کا خاتمہ نہ ہونا افسوسناک ہے: دفتر خارجہ

کشمیر پر اپنے موقف سے پیچھے نہیں ہٹے ،پولیو وائرس کا خاتمہ نہ ہونا افسوسناک ...
کشمیر پر اپنے موقف سے پیچھے نہیں ہٹے ،پولیو وائرس کا خاتمہ نہ ہونا افسوسناک ہے: دفتر خارجہ

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)دفتر خارجہ نے افغانستان میں اقتدار کی پرامن منتقلی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہاکہ امریکہ اور افغانستان کے درمیان دوطرفہ سیکورٹی معاہدے کو خوش آمدید کہتے ہیں، پاکستان مسئلہ کشمیر پر اپنے موقف سے بالکل پیچھے نہیں ہٹااور کشمیری قیادت سے مشاورت معمول کا حصہ ہے ۔

 دفتر خارجہ میں ہفتہ وار میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ تسنیم اسلم کا کہنا تھا کہ افغانستان خود مختار ملک ہے ، دوسرے ممالک کے ساتھ معاہدے کرنے میں آزاد ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کا حل کشمیریوں کے حق خودارادیت میں ہے، مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہئے، شملہ معاہدہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کو غیر موثر نہیں بناتا، پاکستان اور بھارت پڑوسی ملک ہیں آج یا کل ہمیں مسائل کے حل کے لیے مذاکرات کرنا ہوں گے۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ سیاچن سے افواج کی واپسی کی تجویز پر بھارت نے مثبت جواب نہیں دیا۔

تسنیم اسلم نے کہا کہ کوششوں کے باوجود پولیو وائرس کا خاتمہ نہ ہونا افسوسناک ہے،پاکستان سے باہر جانے والوں کو پولیو ویکسین پلائی جا رہی ہیں۔ پولیو پر قابو پانے کے لیے بھرپور کوششیں کر رہے ہیں۔اُنہوںنے کہا کہ دہشتگردی کا خاتمہ علاقائی ممالک کی مشترکہ ذمہ داری ہے، کسی ادارے یا تنظیم کو دہشتگرد قرار دینے کا اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق طریقہ کار موجود ہے، امریکہ کی طرف سے یکطرفہ طور پر 3 پاکستانیوں پر پابندی کے فیصلے کا اطلاق پاکستان نہیں ہوتا۔

مزید :

اسلام آباد -