بھارت نے کشمیر میں ظلم وبربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے : فضل الرحٰمن

بھارت نے کشمیر میں ظلم وبربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے : فضل الرحٰمن

  

 بٹ خیلہ (بیورورپورٹ)جمعیت العلمائے اسلام کے مرکزی رہنماء مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ جمعیت العلمائے اسلام ایک بین الاقوامی مذہبی تشخص رکھنے والی جماعت ہے اور ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کے لئے جدوجہدمیں مصروف ہے ۔یہودی ایجنٹ ملک کے اسلامی تشخص کو مٹانے کے درپے ہیں جن کو ہم مذہبی قوت سے کچل دیں گے ۔وہ سخاکوٹ ضلع ملاکنڈمیں پیغام امن واستحکام کانفرنس اور شمولیتی تقریب کے موقع پر ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے ۔جلسے سے سابق وزیراعلیٰ ووفاقی وزیر ہاؤسنگ اکرم خان درانی ،جمعیت العلمائے اسلام کے صوبائی امیر سینیٹرگل نصیب خان ،سابق سینیٹر صاحبزادہ خالدجان،سابق سینیٹرمولانا راحت حسین ،مولانا عبدالجلیل جان ،حق نوازخان ایڈوکیٹ ،مفتی کفایت اللہ ،سابق ایم این اے مولانامحمدقاسم اور دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا ۔اس موقع پر پاکستان پیپلزپارٹی کے دیرینہ رہنماء اور سابق ممبر ڈسٹرکٹ کونسل حق نوازخان ایڈوکیٹ ،صفدرخان ایڈوکیٹ ،شاہ نوازخان خاندان اور ساتھیوں سمیت مستعفی ہوکر جمعیت العلمائے اسلام میں شامل ہوگئے ۔مقررین نے کہا کہ جب بھی ملک میں امن واستحکام قائم ہوجاتا ہے اور بیرونی سرمایہ کارپاکستان میں سرمایہ لگانے کا ارادہ کرتے ہیں تو تحریک انصاف کے چیئرمین مغربی پاکستان دشمن قوتوں کا آلہ کار بن کر ترقی کی راہ میں روڑے اٹکا نے پر اُترآتاہے ۔پاک چائینہ کاریڈور ایک طرف اگر بھارت کی آنکھوں میں کھٹک رہا ہے تو دوسری جانب مغربی قوتوں کے پشت پناہی پر پاکستان تحریک انصاف دھرنے دے کر پاک چائنا تعلقات خراب کرنے کی کوششوں میں مصروف رہتا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ بھارت نے کشمیرمیں ظلم وبربریت کا بازارگرم کررکھا ہے اور کشمیری عوام پر تاریخی ظلم وجبرکررہا ہے اور اُن کومختلف طریقوں سے اذیتیں دے رہے ہیں ۔اُنہوں نے کہا کہ قبائل پاکستان کے استحکام کے لئے بغیر تنخواہ کے سپاہی ہیں اور اُن کے ساتھ ظلم وبربریت کا سلوک کیا جارہا ہے اور اُن کی شناخت کو مشکوک بنایا جارہاہے ۔اُنہوں نے کہا کہ عمران خان جہادکے معنی تک نہیں جانتے اُن کے منشورمیں تو مخلوط ناچ گانوں کا رواج عام ہو رہاہے ۔اُنہوں نے کہا کہ صوبہ خیبرپختونخواہ میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت مکمل طورپر ناکام ہوچکی ہے اور سالانہ ترقیاتی بجٹ لگانے سے بھی بے خبرہیں ۔اُنہوں نے کہا کہ صوبہ خیبرپختونخواہ میں پندرہ سال کے دوران تین حکومتیں گذری ہیں جن میں ایم ایم اے ،اے این پی اور اب پی ٹی آئی کی حکومت ہے ۔ایم ایم اے واحد حکومت تھی جس نے صوبے میں میگا پراجیکٹ قائم کئے جس سے صوبے کو سالانہ اربوں روپے ریونیومل رہا ہے جبکہ صوبہ میں تعلیم کو عام اور مفت کیا ۔صحت پر خصوصی توجہ دے کر ہسپتالوں کا جال بچھایا ۔ہائیڈل پاورپراجیکٹ میں ملاکنڈتھری جیسے بڑے منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جس سے صوبے کو سالانہ تین ارب روپے آمدن مل رہا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ اے این پی کی حکومت میں تو ایزی لوڈ کلچر نے بین الاقوامی اورتحریک انصاف کی حکومت میں ناچ گانوں کو فروغ دیا گیا ہے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -