ٹارگٹ کلنگ ملک کی سلامتی کیخلاف گہری سازش ہے ،سردار سجاد حسین

ٹارگٹ کلنگ ملک کی سلامتی کیخلاف گہری سازش ہے ،سردار سجاد حسین

  

پشاور( کرائمز رپورٹر ) امامیہ جرگہ صوبہ خیبر پختونخوا پشاور کے زیر اہتمام محرم الحرام کے حوالے سے ایک اہم اجلاس مرکزی شیعہ جامع مسجد کوچہ رسالدار میں آج سہ پہر 3بجے منعقد ہوا ۔اجلاس میں علماء کرام آکابرین قوم،ذاکرین عظام، فعال قومی جماعتوں کے نمائندوں ، امامیہ جرگہ کے کونسلر زو یونٹ آراکین، متولیان امام بارگاہان، لائسنس ہولڈرز ، خدام جلوس ہائے عزاداری ، ماتمی سنگتیں، طلباء تنظیمیں ، امامیہ سکاؤٹس، امامیہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن ، امامیہ اوپن سکاؤٹس، جے ایس او ، مختیار آرگنائزیشن ، ایم ایس او، ابراہیم سکاؤٹس، حسینی سکاؤٹس اور نوجوانوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔ اجلاس میں ڈیرہ اسماعیل خان، کوہاٹ، ہنگو، جہانگیرہ نوشہرہ، رسالپور، ایبٹ آباد، ہری پور،خانپور،حویلیاں،مردان،چارسدہ کے نمائندوں نے بھی شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے امامیہ جرگہ صوبہ خیبر پختونخوا کے سیکرٹری جنرل سردار سجاد حسین زاہد نے ملک اور صوبہ خیبر پختونخوا خصوصاً پشاور میں شیعہ مسلمانوں کی ٹارگٹ کلنگ کی پر زور مذمت کرتے ہوئے اسے ملک کی سلامتی اور بقاء کے خلاف گہری سازش قرار دیا اور کہا کہ اس کے پیچھے عالمی سامراج اور ملک دشمن قوتوں کے ملوث ہونے کو رد نہیں کیا جاسکتااس موقع پر علامہ سید جوادہادی، آخونزادہ مظفر علی، ارشاد حسین خلیلی اور باہر سے آئے ہوئے مہمانوں نے بھی اجلاس سے خطاب کیامہمانانِ گرامی نے اپنے اپنے علاقوں کے مسائل پیش کئے ۔اس موقع پر سردار سجاد حسین زاہد نے کہاکہ ملت جعفریہ کو دیوار سے لگانے کے نتائج ملک کے مفاد میں کسی صورت نہیں ہو سکتے حکومت اور انتظامیہ معصوم شہریوں کو تحفظ دینے میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے قاتل سرِ عام دندناتے پھر رہے ہیں اوراسلام کے نام پر پورے پاکستان میں فرقہ واریت کو پروان چڑھایا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ تاریخ گواہ ہے کہ طاقت اور بندوق کے زور پر حسینیت کو مٹانے کی کوششیں کی گئیں لیکن ہمیشہ حسینیت کو مٹانے والے خود ہی مٹتے رہے انہوں نے کہا واقع کربلا فقط حق و باطل کے درمیان جنگ کا نام نہیں بلکہ واقعہ کربلا جمہوری سوچ، نظریہ فلسفہ اور ڈکٹیٹر کا نام ہے جو قیامت تک زندہ رہے گا اس موقع پر مقررین نے صوبہ بھر میں حکومت کی طرف سے مساجد اور امام بارگاہوں کی تعمیر نو پر پابندی کے فیصلے کو مسترد کیا اسی طرح ایک دوسرے قرار داد کے ذریعے علم منت نذر نیاز کے جلوسوں پر حکومتی پابندی کو بھی مسترد کیا اور یہ عہد کیا کہ ہر صورت ہر حال میں عزاداری کے پروگرامات حسبِ سابق ادا کئے جائینگے اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ کسی بھی صورتحال کے مقابلے کیلئے قوم کو چوکس اور منظم رہنا چاہئیے اجلاس میں عزاداری کے پروگرامات کی بروقت برآمدگی اور اختتام پر بھی غور کیا گیااجلاس میں صوبہ بھر میں سالِ گزشتہ عزاداری کے خلاف درج کی گئیں ایف آئی آرز کا فوری طور پر منسوخی کا مطالبہ کیا اجلاس میں جامع شہید عارف الحسینی اور امامیہ مسجد حیات آباد خودکش دھماکے بارے وزیر اعلیٰ کے وعدوں کی تکمیل کا مطالبہ کیا گیا اجلاس میں شہید اساتذہ جن کا تعلق استر زئی ضلع ہنگو سے ہے ان کیلئے بھی شہید پیکج کا مطالبہ کیا گیا اجلاس میں پشاور تحریک انصاف کے چیئرمین جناب عمران خان سے مطالبہ کیا گیا کہ صوبہ خیبر پختونخوا میں شیعہ مسلمانوں کے ساتھ نارواں سلوک رکھا گیا جو کہ خیبر پختونخوا حکومت کر رہی ہے اس کو نذر ثانی کیا جائے اجلاس میں علماء کرام اور ذاکرین عظام سے بھی اپیل کی گئی کہ وہ محرم الحرام کے دوران واقعہ کربلا اور فلسفہ شہادت امام حسین ؑ کو بیان کریں اور اختلافی مسائل پر گفتگو سے گریز کریں اجلاس میں قوم سے اپیل کی گئی کہ وہ اتحاد بین المسلمین کا دامن کسی صورت بھی ہاتھ سے مت چھوڑیں کیونکہ اسی میں پاکستان کی سالمیت اور بقاء ہے۔آخر میں سیکورٹی پلان کی منظور ی دی گئی اجلاس میں قوم کے نوجوانوں ، سکاؤٹس تنظیموں، طلباء تنظیموں سے اپیل کی گئی کہ وہ آگے بڑھے اور عزاداری امام حسین ؑ کے تمام پروگراموں کی سیکورٹی کی ذمہ داری سنبھالیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -