جنوبی پنجاب بھر میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا بدترین سلسلہ جاری، شہری سراپا احتجاج

جنوبی پنجاب بھر میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا بدترین سلسلہ جاری، شہری سراپا احتجاج

  

ملتان ‘ وہاڑی ‘ بدھلہ سنت ‘ تلمبہ ‘ کوٹ ادو ‘ ہیڈ راجکاں ‘ راجن پور ( سٹاف رپورٹر ‘ نمائندگان ) ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھر میں بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے ‘ جس سے ناصرف گھریلو صارفین بلکہ کاروباری طبقہ بھی شدید پریشانی سے دوچار ہے ۔ اس سلسلہ میں ملتان سے سٹاف رپورٹر کے مطابق ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں اکتوبر کا مہینہ شروع ہونے کے باوجود لوڈشیڈنگ میں کمی نہیں آسکی ‘ گزشتہ روز بھی 14گھنٹے تک بجلی بند کی گئی ‘وولٹیج کی کمی اور ٹرپنگ کے مسئلے نے بھی سر اٹھائے رکھا جس کے باعث صورتحال بد ترین ہو گئی ‘ نواحی علاقوں میں بجلی کی فراہمی نہ ہونے کے برابر رہی ‘مختلف علاقوں میں (بقیہ نمبر44صفحہ7پر )

مساجد اور گھروں میں پانی ختم ہو گیا جس کے باعث عوام کو شدید پریشانی کی سامنا کرنا پڑا ‘صارفین کا کہنا ہے کہ موسم تبدیل ہونے پر ائر کنڈیشنڈ کے استعمال میں بہت کمی آئی ہے ‘اس کے باوجود طویل لوڈشیڈنگ پریشان کن ہے ‘ اس کے علاوہ مرمت و بحالی کے نام پر 6‘6گھنٹے اضافی بجلی کی بندش کی جاتی ہے جس کے بعد عوام کو اس کا ریلیف دینے کی بجائیشیڈول کی لوڈشیڈنگ شروع کر دی جاتی ہے ‘صارفین نے صورتحال پر شدید احتجاج کیا ہے ۔ نیشنل پاور سنٹر اسلام آباد اور ریجنل پاور کنٹرول سنٹر (آر سی سی) جامشورو نے ہفتے کے روز ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں فورس لوڈشیڈنگ کرائی ‘میسکو اور انڈسٹریل سٹیٹ سمیت ملتان شہر کو بجلی فراہم کرنے والے فیڈرز بند کرادئیے گئے ۔ وہاڑی سے بیورو رپورٹ ‘ نامہ نگار کے مطابق بجلی کی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ دن بدن بڑھنے لگا ، جس سے عوام وذلیل وخوار وہنے لگی تاجربھی بجلی کی بندش کی وجہ سے پریشان ہیں جس پر مختلف مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے افراد تجمل حسین ، الطاف علی ، محمدمحسن ، فقیر حسین ، عتیق احمد عرصہ دراز سے جاری ہے حکمران لوڈشیڈنگ روکنے میں ناکام نظر آرہے ہیں جس سے ملکی معیشت پر برے اثرات پڑے رہے ہیں تاجر برادری پریشان ہے اور انکے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑتے جارہے ہیں جبکہ حکمرانوں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگتی لہٰذ ا وزیراعظم پا کستان ، وفاقی وزیر بجلی ، چیئرمین واپڈا سمیت متعلقہ اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر بجلی کی طویل غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کرکے عوام کی پریشانی دور کی جا ئے۔ بدھلہ سنت سے نامہ نگار کے مطابق بجلی کی ٹرپنگ جاری ،وولٹیج کی کمی ،زیادہ ہونے کی وجہ الیکٹرونک اشیاء جلنے لگیں تفصیل کے مطابق مخدوم رشید فیڈر سے منسلک بدھلہ سنت لائن پر بجلی کی بار بار ٹرپنگ اور اکثر وولٹیج کی کمی ،زیادہ ہونے کی وجہ سے گھریلو اشیاء جس میں فریج ،اے سی،ٹی وی جل جاتے ہیں مخدوم رشید فیڈر میں نئے ٹرانسفارمر لگائے گئے ہیں لیکن تا حال مسئل حل نہیں ہوا اور وولٹیج کی کمی ،بیشی اسی طرح ہے عوامی،سماجی حلقوں نے چیف ایگزیکٹو میپکو کو نوٹس لیتے ہوئے اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے ۔ تلمبہ سے نمائندہ پاکستان کے مطابق بجلی کی طویل ترین لوڈ شیڈنگ، صبح ساڑھے آٹھ بجے سے شام چاربجے تک صرف چالیس منٹ بجلی آئی،گھریلواورکاروباری اموربری طرح متاثر تفصیل کے مطابق گزشتہ روز(ہفتہ) کوصبح ساڑھے آٹھ سے ساڑھے بارہ بجے تک بجلی بند رہی جس کے بعد صرف چالیس منٹ کے لیے بجلی فراہم کی گئی اورایک بج کرانیس منٹ پر پھر سے بجلی غائب ہو گئی جوکہ شام چار بجے بحال ہوئی ۔بجلی کی طویل بندش نے کاروباری اور گھریلو امور کو بری طرح متاثرکیا۔گھروں اور مساجد میں پانی کی شدیدقلت کی وجہ سے لوگوں کو نمازاداکرنے اور گھریلو امورنمٹانے میں شدیددشواری کا سامنا کرنا پڑا۔منظوراحمد، اللہ دتہ، محمد علی، لیاقت علی، محمد وسیم، شاہد علی، علی محمد، احمد بخش، زاہد محمود، محمد افضل، خضرحیات، مسعوداحمدوکئی دیگر نے صورت حال پر شدیداحتجاج کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ بجلی کی صورت حال کو بہترکیاجائے بصورت دیگرہم شدیداحتجاج پر مجبور ہو جائیں گے۔ کوٹ ادو سے نامہ نگار کے مطابق واپڈا حکام نے لا ئن لاسز پو ر ے کر نے کیلئے کو ٹ ادو شہر اورمضا فات میں جبری لو ڈ شیڈنگ شر وع کر دی ،چھ چھ گھنٹے لو ڈ شیڈنگ کر نا واپڈا کا معمول بن گیا ،تا جر تنظیموں نے واپڈا کے خلاف بڑ ے احتجاجی مظا ہر ے کر نے کیلئے سر جو ڑ لیے ،تاجر رہنماؤں رانا عزیز ، ملک رشید ،مصور گر مانی اور فخر عالم مغل نے صحا فیوں سے بات کر تے ہو ئے کہا ہے کہ اگر واپڈا حکام نے اپنی روش نہ بدلی ان کے خلاف تو پو ر ے شہر میں پہیہ جام اور شٹر ڈاؤن ہڑتا ل کی کا ل دی جا ئے گی ۔ ہیڈ راجکاں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق ہیڈراجکاں اورنواح میں واپڈاکی عوام دشمن پالیسی میں کمی نہ آ سکی اور تمام رہی ہی کسر اب نکالنے لگے ہوئے ہیں۔شدید گرمی اور حبس میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ 16گھنٹے سے بھی تجاوز کر گیا۔ میں سپلائی بند ہونے کے نام پر مسلسل چھ سے ساتھ گھنٹے بجلی بند رکھی جاتی ۔طویل بجلی کی بندش کی وجہ سے لوگوں کے کاروبار زندگی بالکل ختم ہو گئے ہیں ۔گھروں اور مساجد میں پانی کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے ۔ اور لوگ ہینڈ پمپ کی تلاش میں مارے مارے پھرتے ہیں۔تاکہ پینے کا پانی ہی حاصل کیا جا سکے ۔ اہل علاقہ سراپا احتجاج ہیں اور حکومتی دعووں کے خلاف شدید احتجاج کرتے نظر آ رہے ہیں۔ شہروں میں بجلی کی ترسیل بہتر ہے جبکہ دیہی علاقوں کو مسلسل نظر اندازکیا جا رہاہے۔ راجن پور سے تحصیل رپورٹر کے مطابق راجنپور شہر میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے جس کے باعث شہریوں،کاروباری طبقہ اور طلباء وطالبات کو سخت دشواری کا سامنا کرنا پٹر رہا ہے ،شدید گرمی میں شہریوں کی مشکلات مین اضافہ ہو گیا ہے،مساجد میں پانی کی عدم دستیا بی کی وجہ سے نمازیوں کو مشکلات سامنا ہے،بجلی کی غیر علانیہ لو ڈ شیڈنگ سے راتوں کو بوڑھے بچے جوان سب جاگ کر راتیں گزارنے پر مجبور ہیں اور بار بار ٹرپنگ اور کم وولٹیج کی وجہ سے الیکٹرونکس اشیاء کے جلنا روز کا معمول بن چکا ہے شہری اعلی حکام سے کم وولٹیج کو پورا کرنا اور شیڈول کے مطابق لوڈ شیڈنگ کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

لوڈشیڈنگ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -