4 سال پہلے بالی ووڈ اداکارہ جیا خان کی موت کی دراصل وجہ کیا بنی؟ کئی سالوں بعد بالآخر تہلکہ خیز حقائق سامنے آگئے

4 سال پہلے بالی ووڈ اداکارہ جیا خان کی موت کی دراصل وجہ کیا بنی؟ کئی سالوں بعد ...
4 سال پہلے بالی ووڈ اداکارہ جیا خان کی موت کی دراصل وجہ کیا بنی؟ کئی سالوں بعد بالآخر تہلکہ خیز حقائق سامنے آگئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ممبئی(نیوز ڈیسک) برطانوی نژاد بالی ووڈ سٹار جیا خان کی خود کشی کا تہلکہ خیز واقعہ چار سال قبل پیش آیا لیکن پہلی بار ان کے والدین نے کھل کر اپنے شکوک و شبہات کا اظہار کرتے ہوئے کہہ دیا ہے کہ انہیں اس بات پر ہرگز یقین نہیں کہ ان کی بیٹی نے خود کشی کی، بلکہ اصل معاملہ کچھ اور ہے۔
دی مرر کے مطابق 25 سالہ برطانوی نژاد بالی ووڈ سٹار جیا خان کی والدہ رابعہ خان کا کہنا ہے کہ اگرچہ ان کی بیٹی کی لاش پنکھے سے جھولتی ہوئی ملی لیکن وہ اس بات کو ماننے کیلئے تیار نہیں ہیں کہ ان کی بیٹی نے خود کشی کی۔ جیا خان نے 2007ءسے 2010ءکے درمیان تین ہندی فلموں میں کام کرکے شہرت حاصل کی تھی۔ جس رات ان کی خود کشی کا واقعہ پیش آیا اسی رات وہ اپنی چھوٹی بہن کویتا کے ساتھ ٹیکسٹ میسجز کا تبادلہ کررہی تھیں جن میں وہ انتہائی خوش اور پرجوش نظر آتی تھیں۔ ان کی بہن کویتا اگلے روز لندن سے بھارت آرہی تھیں۔
کویتا کی خود کشی کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ان کے دوست سروج پنچولی، جو کہ اداکار ادیتیا پنچولی کے بیٹے ہیں، کو تفتیش کیلئے حراست میں لے لیا گیا تھا۔ ممبئی ہائیکورٹ کی جانب سے ایک ماہ بعد انہیں ضمانت پر رہا کردیا گیا اور اگست 2016ءمیں سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن نے اعلان کیا کہ جیا خان کی موت خود کشی کا واقعہ تھی۔

پلے بوائے میگزین کے بانی کی 91 سال کی عمر میں موت، اب اُن کی دولت میں سے اُن کی 31 سالہ نوجوان بیگم کو کتنی رقم ملے گی؟ جواب جان کر پاکستانی مَردوں کو یقین نہیں آئے گا کہ ایسا بھی ممکن ہے
جیا خان کی والدہ کی طرح ان کی چھوٹی بہن کویتا بھی اس بات کو ماننے کوتیار نہیں ہیں کہ ان کی بہن نے خود کشی کی۔ برطانوی اخبار گارڈین سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ”کوئی بھی شخص جو جیا کو جانتا ہے وہ یہ بات نہیں مان سکتا کہ وہ زندگی کے مسائل سے مایوس ہوکر خود کشی جیسا اقدام کرسکتی تھیں۔ ہم نے شروع میں پولیس پر اعتماد کیا تھا کہ شاید وہ معلوم کرلیں گے کہ اس قتل کے پیچھے اصل حقیقت کیا ہے، لیکن ایسا نہیں ہوا۔“


پولیس کو جیا خان کی خود کشی کے پانچ روز بعد ایک خط ملا تھا جس میں مبینہ طور پر انہوں نے اسقاط حمل کا ذکر کیا تھا۔ خط سے یہ اشارہ ملتا ہے کہ وہ سروج پنچولی کے ساتھ تعلق کے نتیجے میں حاملہ ہوئی تھیں۔ ان کی والدہ رابعہ کا کہنا ہے کہ اس خط کا ان کی بیٹی کی خود کشی سے کوئی تعلق نہیں ہے بلکہ یہ اس نے مزید تعلیم کیلئے لندن روانہ ہونے سے قبل الوداعی خط کے طور پر لکھا تھا۔ ان کا مزید کہنا ہے کہ ”میری بیٹی کے چہرے اور بازو پر زخم کے نشانات تھے جبکہ کمرے میںا یک دراز کا ہینڈل ٹوٹا ہوا تھا اور خون کے دھبے بھی نظر آئے۔ بالکونی کی کھڑکی کا دروازہ بھی کھلا ہوا تھا۔ پولیس نے بھی ابتدائی طور پر معاملے کو مشکوک قرار دیا تھا تاہم بعد میں انہوں نے اپنا بیان بدل لیا۔“

فحش اداکارہ نے توبہ کا اعلان کرتے ہوئے اب ایسا پیشہ اختیار کرنے کا اعلان کردیا کہ جان کر مُردے بھی اُٹھ بیٹھیں گے
رابعہ خان نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے نام ایک خط لکھا ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ سی بی آئی کے اہلکاروں نے جان بوجھ کر شواہد غائب کئے اور ان کی بیٹی کے قتل کو خود کشی کا رنگ دیا گیا ہے۔ انہوں نے بھارتی وزیراعظم سے اپیل کی ہے کہ اس معاملے میں ذاتی مداخلت کرتے ہوئے ازسرنو تحقیقات کا حکم دیں تاکہ سچ سامنے لایا جاسکے۔

مزید :

تفریح -