فلیگ شپ ریفرنس، احتساب عدالت کا نواز شریف اور وکیل کی عدم حاضری پر اظہار برہمی

فلیگ شپ ریفرنس، احتساب عدالت کا نواز شریف اور وکیل کی عدم حاضری پر اظہار ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ) فلیگ شپ ریفرنس میں نواز شریف احتساب عدالت پیش نہ ہوسکے، عدالت نے سابق وزیراعظم کا ایک روزہ حاضری کا استثنیٰ منظور کرتے ہوئے سماعت 4اکتوبر تک ملتوی کر دی۔احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے نواز شریف کے خلاف گزشتہ روز فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت کی۔ خواجہ حارث کے معاون وکیل عدالت میں پیش ہوئے اور بتایا کہ خواجہ حارث بیماری کی وجہ سے پیش نہیں ہو سکیں گے۔ عدالت نے استفسار کیا کہ خواجہ حارث بیمار ہیں تو کیا باقی چار وکیل بھی بیمار ہو گئے، ملزم کہاں ہے؟ ایسا نہیں ہوتا کہ ملزم اپنی مرضی سے آئے۔نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ نواز شریف نے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست بھی دائر نہیں کی، یہ مرضی سے عدالت کو چلانا چاہتے ہیں، معاون وکیل کی موجودگی میں گواہ کا بیان قلمبند کیا جائے۔سماعت کے دوران جج ارشد ملک نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کے وکیل خواجہ حارث کی عدم حاضری پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ملزم بھی نہیں وکیل بھی نہیں، کیا میں سارا دن انتظار کرتا رہوں گا، فلیگ شپ ریفرنس سننے کیلئے میں نے باقی سارے کیس ملتوی کئے، مجھے بتا دیں آپ لوگ چاہتے کیا ہیں، میں پھر آڈر لکھوا دیتا ہوں آپ لوگ چیلنج کرتے رہنا۔ معاون وکیل نے کہا فلیگ شپ انویسٹمنٹ اور العزیزیہ ریفرنس کی الگ الگ تاریخوں کی وجہ سے کنفیوژن ہوئی، جس کی وجہ سے سابق وزیراعظم نواز شریف عدالت میں پیش نہیں ہوسکے۔

فلیگ شپ ریفرنس

مزید :

صفحہ آخر -