اراضی کے ریکارڈ کو کمپیوٹرازڈ کرنا اولین ترجیح ہے : کامران بنگش

اراضی کے ریکارڈ کو کمپیوٹرازڈ کرنا اولین ترجیح ہے : کامران بنگش

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)زمینوں کے ریکارڈ کو کمپیوٹرائزڈ کرنے کے عمل کو جلد از جلد مکمل کرنا خیبر پختون خواہ حکومت کی اولین ترجیحات میں سے ایک ہے، ان خیالات کا اظہار وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش نے خیبرپختونخوا آئی ٹی بورڈ میں زمینوں کے ریکارڈ کی کمپیوٹرائزیشن کے حوالے سے منعقدہ ایک اجلاس میں کیا، اجلاس میں سیکرٹری ایس ٹی اینڈ آئی ٹی،ایم ڈی کے پی آئی ٹی بورڈ اوردیگر اعلیٰ افسران کی موجودگی میں اس حوالے سے بریفنگ لیتے ہوئے کامران بنگش نے کہا کہ ہمیں مزید تاخیر کیے بغیر اس عمل کو جتنا جلدی ممکن ہو سکے مکمل کرنا ہے اور ایک بہترین ڈیجیٹل نظام کے ذریعے عوام کو سہولت فراہم کرنی ہے۔کامران بنگش نے کہا کہ اس مقصد کی جلد از جلدتکمیل کے لیے ایک جامعہ حکمت عملی بنائی جائے جس میں درپیش مسائل کی نشاندہی کے ساتھ ساتھ اس میں جدت لانے کی منصوبہ بندی بھی کی جائے، معاون خصوصی برائے سائنس اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی نے کہا کہ ہمیں اس پانچ سالہ دور میں وقت ضائع کیے بغیر کام کرنا ہے اور عوام کو ریلیف دینے کے لیے اپنی پوری قوت صرف کرنی ہے، کامران بنگش نے کہا کہ محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کا کردار اس جدید دور میں بہت اہم ہے اور ہم پر حکومتی اداروں کے نظام کو بہتر بنانے کی بھاری زمہ داری عائد ہوتی ہے۔کامران بنگش نے کہا کہ گزشتہ خیبرپختونخوا حکومت نے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبے میں بہترین کام کیا اب ہمیں اسی تسلسل کو برقرار رکھتے ہوئے پہلے سے بھی زیادہ کارکرگی کا مظاہرہ کرنا ہو گا. کامران بنگش نے حکومتی سطح پر ہر طرح کے تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ ہم آپ کے ساتھ قدم بہ قدم چلیں گے اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبے کو مزید فعال بنانے میں ہر طرح کا تعاون کیا جائے گا اور میں امید کرتا ہوں کہ ایس اینڈ آئی کا ادارہ بھی اپنا فرض نبھائے گا اور ہم ایک ٹیم کی طرح اپنے مقاصد کی تکمیل کے لیے کام کریں گے.

مزید :

پشاورصفحہ آخر -