آج تک میڈیا والے دوسروں کی ویڈیوز بناتے تھے لیکن اب پولیس والوں نے صحافیوں کی ایسی ویڈیو بنا ڈالی کہ بڑی مشکل میں پھنس گئے

آج تک میڈیا والے دوسروں کی ویڈیوز بناتے تھے لیکن اب پولیس والوں نے صحافیوں کی ...
آج تک میڈیا والے دوسروں کی ویڈیوز بناتے تھے لیکن اب پولیس والوں نے صحافیوں کی ایسی ویڈیو بنا ڈالی کہ بڑی مشکل میں پھنس گئے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )لاہور ہائیکورٹ کے حکم کے بعد وارڈنز نے شہریوں کے دھڑا دھڑ چلان کرنا شروع کر دیئے ہیں جبکہ اس موقع پر صحافیوں نے جب پولیس وارڈنز سے اپنا تعارف کروا کر چھوٹ حاصل کرنے کی کوشش کی تو ٹریفک پولیس نے ان کی ویڈیوز بنا کر سوشل میڈیا پر شیئر کرنا شروع کر دیں جس کے بعد ہنگامہ برپا ہو گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ دو دنوں میں ٹریفک پولیس کے اہلکاروں کی جانب سے بنائی گئی صحافیوں کی ویڈز نے سوشل میڈیا پر تہلکہ برپا کر رکھاہے ۔ ویڈیو میں دیکھا جا سکتاہے کہ صحافی اہلکاروں سے کہہ رہاہے کہ آپ نے چالان کرنا ہے تو کریں لیکن ویڈیو بنانے کا مقصد کیا ہے ؟ ۔ تاہم آپ ٹریفک اہلکار کے ہاتھ میں چالان بک دیکھ سکتے ہیں اور اس کتاب پر صحافی کا کارڈ پڑا ہواہے جو کہ ڈان نیوز کا صحافی ہے ، پولیس اہلکار نے صحافی سے کہا کہ آپ جنرلسٹ ہیں اور آپ کی موٹر سائیکل پرنمبر پلیٹ بھی نہیں ہے جس پر صحافی نے کہاکہ آپ نے موٹر سائیکل بند کرنی ہے تو کر لیں وہ میں چھڑوا لوں گا۔

ویڈیو دیکھیں:

تاہم اس کے علاوہ ایک اور ویڈیو سوشل گردش کر رہی ہے جس میں صحافی ممکنہ طور پر کوہ نور چینل میں کام کرتاہے اور اسے بھی وارڈنز کی جانب سے روکا گیا ۔ویڈیو میں آپ دیکھ سکتے ہیں کہ ٹریفک وارڈنز ان سے کاغذات مانگ رہے ہیں اور ساتھ میں ویڈیو بھی بنا رہے ہیں جبکہ صحافی مسلسل یہ پوچھ رہاہے کہ آپ کو ویڈیو بنانے کا اختیا ر کس نے دیاہے ۔ویڈیو میں صحافی چیف جسٹس سے اس کا نوٹس لینے کا بھی مطالبہ کرتے ہوئے نظر آ رہاہے ۔

ویڈیو دیکھیں:

ابھی یہ سلسلہ تھمانہ تھا کہ صحافی برادری بھی وارڈنز اور پولیس اہلکاروں کی قوانین کی خلاف ورزیاں عوام کے سامنے لانے کیلئے سرگرم ہو گئی اور انہوں نے بھی ویڈیو کلچر کو آگے بڑھاتے ہوئے مال روڈ پر ڈیرے ڈال لیے اور وارڈنز کے علاوہ پولیس اہلکاروں کی بھی ویڈیوز بنانا شروع کر دیں ۔

نجی ٹی وی لاہور رنگ کے صحافی بھی میدان میں آئے اور انہوں نے قانون کی خلاف ورزی کرنے والے وارڈنز کو مال روڈ پر پکڑوا پکڑوا کر چالان کروائے ۔

یہ صورتحال سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس نے بھی نوٹس لیااور وارڈنز کی جانب سے ویڈیو بنانے پر سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے چیف ٹریفک آفیسر کو کل طلب کر لیاہے اور ویڈیو بنانے پر سخت پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔

ویڈیو دیکھیں:

مزید :

ڈیلی بائیٹس -