پٹیل پاڑہ کے علاقے میں واقع سکول میں پریمی جوڑے کی ہلاکت، ایک اور خط سامنے آگیا

پٹیل پاڑہ کے علاقے میں واقع سکول میں پریمی جوڑے کی ہلاکت، ایک اور خط سامنے ...
پٹیل پاڑہ کے علاقے میں واقع سکول میں پریمی جوڑے کی ہلاکت، ایک اور خط سامنے آگیا

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) پٹیل پاڑہ کے علاقے میں واقع سکول میں دوست کے ہاتھوں قتل ہونیوالی لڑکی اور لڑکے سے متعلق ایک اور خط سامنے آگیاہے جس کے مطابق پستول مقتولہ کے والد کی ملکیت ہے جو نوروز کے کہنے پر وہ سکول میں لائی تھی ۔

تفتیشی ذرائع کے مطابق فاطمہ اور نوروز شادی کرناچاہتے تھے لیکن نوروز کے گھروالے اس پر راضی نہیں تھے جس پر دونوں نے انتہائی اقدام کرلیا۔ تحقیقات کے دوران سامنے آنیوالے دوسرے خط میں نوروز نے صباعرف فاطمہ کو سکول میں پستول لے کرآنے کو کہاجس پر فاطمہ پستول اپنے بیگ میں رکھ کر سکول لے آئی ۔ خط کے متن کے مطابق نوروز نے فاطمہ کو ہدایت کی کہ وہ سکول آتے ہوئے پیار کی نشانی کے طور پر اس کی طرف سے دی گئی انگوٹھی بھی پہن کر آئے ۔

ذرائع نے بتایاکہ پستول فاتمہ کے والد بشیر کی ملکیت اورلائسنسی ہے ۔

مزید : کراچی