سعودی لیبر قوانین میں ایک عرصے بعد بڑی تبدیلیوں کا فیصلہ، غیر ملکیوں کیلئے انتہائی ضروری معلومات

سعودی لیبر قوانین میں ایک عرصے بعد بڑی تبدیلیوں کا فیصلہ، غیر ملکیوں کیلئے ...
سعودی لیبر قوانین میں ایک عرصے بعد بڑی تبدیلیوں کا فیصلہ، غیر ملکیوں کیلئے انتہائی ضروری معلومات

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی وزارت محنت نے لیبر قوانین میں 40 اہم ترامیم متعارف کروانے کا اعلان کردیا ہے اور ان ترامیم کا نفاذ 18 اکتوبر سے متوقع ہے۔

نیوز سائٹ ’سعودی گزٹ‘ نے ایک سینئر افسر کے حوالے سے بتایا ہے کہ ان ترامیم کا زیادہ تر تعلق معائنے اور قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کیلئے سزاؤں سے ہوگا۔ ترامیم میں ایک ہزار سے ایک لاکھ ریال جرمانے اور قوانین کی خلاف ورزی کرنے والی کمپنیوں کی عارضی یا مستقل بندش بھی شامل ہے۔ ان ترامیم کے بعد ایسی کمپنیاں جنہوں نے سعودی شہریوں کی مقررہ تعداد کو نوکریاں نہ دے رکھی ہوں محکمہ ان کے ویزوں کی تجدید از خود ہی روک سکے گا۔

یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ترامیم کا مقصد آجروں کو سعودی شہریوں کی ملازمتوں اور تربیت و ترقی جیسے عوامل کی طرف مائل کرنا ہے جبکہ ان مقاصدسے روگردانی کرنے والوں کو سزائیں دنیا بھی ان ترامیم کے اہداف میں شامل ہے۔ ترامیم کو قانونی شکل دینے کیلئے ضروری اقدامات آخری مراحل میں ہیں۔

مزید : بین الاقوامی