وہ ملک جس نے پاکستانیوں کے داخلے پر ہی پابندی لگا دی ہے

وہ ملک جس نے پاکستانیوں کے داخلے پر ہی پابندی لگا دی ہے
وہ ملک جس نے پاکستانیوں کے داخلے پر ہی پابندی لگا دی ہے

  

تریپولی(مانیٹرنگ ڈیسک) کرنل قذافی کی موت کے بعد خانہ جنگی کا شکار لیبیا نے پاکستانی، ایرانی اور یمنی باشندوں کے اپنے ملک میں داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے۔اس پابندی کا اعلان لیبیا کے وزیراعظم عبداللہ التھینی کی اتحادی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں کیا گیا ہے۔ لیبیا اس سے قبل سوڈان، بنگلہ دیش، فلسطین اور شام کے شہریوں کے اپنے ملک میں داخلے پر بھی پابندی عائد کر چکا ہے۔

ایک سال قبل باغی گروپ کے لیبیا کے دارالحکومت تریپولی پر قبضے کے بعد وزیراعظم عبداللہ التھینی کی حکومت ملک کے مشرقی علاقوں تک محدود ہو کر رہ گئی ہے۔ عبداللہ التھینی نے ان علاقوں میں اپنی ہی ایک پارلیمنٹ اور حکومت بنا رکھی ہے جسے دنیا میں کسی بھی ملک نے تسلیم نہیں کیا۔التھینی کی حکومت دیگر ممالک کے شہریوں پر لگائی گئی پابندی پر عملدرآمد بھی اسی محدود علاقے میں کروا سکیں گے جبکہ تریپولی سمیت باقی لیبیامیں اس پابندی پر عملدرآمد نہیں ہو سکے گا۔

2014ءمیں عبداللہ التھینی نے الزام عائد کیا تھا کہ سوڈان فضائی راستے سے تریپولی کے نئے حکمرانوں کو اسلحہ فراہم کر رہا ہے دوسری طرف سوڈان نے اس الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ ہتھیار کسی تخریب کاری کے لیے فراہم نہیں کیے جا رہے تھے، سوڈان اور لیبیا میں مشترکہ بارڈر فورس کو اسلحہ فراہمی کا ایک معاہدہ ہوا تھا اور اسی معاہدے کے تحت مشترکہ فورس کو ہتھیار دیئے گئے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس