سپریم کورٹ:مسیحی خاندان کی خاتون اور2بچوں کو زندہ جلانے کے ملزموں کی درخواست ضمانت خارج

سپریم کورٹ:مسیحی خاندان کی خاتون اور2بچوں کو زندہ جلانے کے ملزموں کی درخواست ...
سپریم کورٹ:مسیحی خاندان کی خاتون اور2بچوں کو زندہ جلانے کے ملزموں کی درخواست ضمانت خارج

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )سپریم کورٹ نے مسیحی خاندان کی خاتون سمیت 2 کمسن بچیوں کو زندہ جلانے کے مقدمہ میں ملوث 4ملزموں کی درخواست ضمانت خارج کر دی ۔ملزموں افتخار، نوراورآصف کی طرف سے عدالت میں موقف اختیار کیا گیاکہ پیپلز کالونی گوجرانوالہ پولیس نے ان کے خلاف بے بنیاد مقدمہ درج کیا ہے، مدعی بوٹا مسیح کی والدہ بشریٰ بی بی،5 سالہ بیٹی ہیرا تبسم اور 3 سالہ بیٹی انعم تبسم کو جلانے میں ان کا کوئی کردار نہیں ہے ،یڈیشنل پراسکیوٹر جنرل اسجد جاوید گھرال نے پولیس ریکارڈ پیش کرتے ہوئے کہا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے چاروں ملزموں کو گنہگار قرار دیا ہے، درخواست گزاروں نے دیگر ملزموں کے ساتھ مل کر گستاخانہ تقریر کو بنیاد بنا کر نہ صرف کمسن بچیوںکو زندہ جلایا بلکہ دیگر گھرو ں کو بھی آگ لگائی ، فاضل بنچ نے پراسکیوشن کے دلائل سے اتفاق کرتے ہوئے چاروں ملزموں کی درخواست ضمانت خارج کر دی ۔

مزید : لاہور