بینکوں کے حفاظتی انتظامات کو فول پرپروف بنانے کیلئے ایس پیز کو ہدایات جاری کر دی گئیں

بینکوں کے حفاظتی انتظامات کو فول پرپروف بنانے کیلئے ایس پیز کو ہدایات جاری ...

 لاہور(کرائم رپورٹر)سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر) محمد امین وینس نے کہا ہے کہ لاہور پولیس شہر میں بینکوں کی انتظامیہ کے ساتھ مل کر SOPپر مکمل عملدرآمد کروا رہی ہے۔بینکوں کی سینئر انتظامیہ کو پیغام دے دیا گیا ہے کہ SOP کے مطابق بینکوں میں سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب ، اسپیشل برانچ سے تصدیق شدہ گارڈز کی تعیناتی ، وینٹیج پوائنٹس کی تعمیر ودیگر تمام حفاظتی انتظامات کو یقینی بنایا جائے۔ لاہور پولیس نے بینکوں کے حفاظتی انتظامات کو فول پروف بنانے کیلئے ڈویژنل ایس پیز کو ہدایات جاری کر دی ہیں جس میں نہ صرف وہ روزانہ کی بنیاد پر مختلف بینکوں کا دورہ کرکے حفاظتی انتظامات کا جائزہ لے رہے ہیں بلکہ بینکوں کی سینئر انتظامیہ سے لے کر بینک مینیجر حضرات سے بھی مکمل رابطہ میں ہیں۔ بینک روزانہ کی بنیاد پر کروڑوں روپوں کی ٹرانزیکشن کرتے ہیں جس پر بینک انتظامیہ پر یہ بنیادی اور قانونی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ جب سکیورٹی ایجنسیز سے سکیورٹی گارڈز تنخواہ پر رکھیں تو ان کی اسپیشل برانچ کے ذریعے مکمل ویریفکیشن کروائی جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ میں ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف کی دعوت پر آئے ہوئے تمام بینکوں کے کنٹری ہیڈز سے حفاظتی انتظامات پرمنعقدہ انتہائی اہم اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف، ایس ایس پی آپریشنز منتظر مہدی، ایس ایس پی انویسٹی گیشن حسن مشتاق سکھیرا، ایس پی ہیڈ کوارٹرز عمر سعید، ایس پی مجاہد سید کرار حسین اور تمام ڈویژنل ایس پیز کے علاوہ UBL ،HBL ، ABL ، MCB،سٹینڈر چارٹر بینک، بینک آف پنجاب، سونیری بینک، میزان بینک و دیگر تمام بینکوں کے کنٹری ہیڈز و افسران نے شرکت کی۔ ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے اس موقع پر حاضرین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بینکوں کی سکیورٹی سے متعلق SOP تین حصوں بینک مینجمنٹ، سکیورٹی کمپنیز اور پولیس رول پر مشتمل ہے۔ گذشتہ عرصہ میں بینکوں میں جو وارداتوں کے واقعات سامنے آئے ہیں ان میں سی سی ٹی وی کیمروں کا ناقص ، سکیورٹی گارڈز کے پاس ناکارہ اسلحہ اور پولیس کے ساتھ مکمل کوآرڈینیشن میں نہ ہونا جیسی چیزیں مشترک پائی گئی ہیں۔ تمام بینکوں میں اچھی کوالٹی کے الا رم سسٹم، سی سی ٹی وی کیمرے اور سکیورٹی گارڈز کی ویریفیکیشن انتہائی ضروری ہیں جن پربینک انتظامیہ کو بڑی سنجیدگی سے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔پنجاب میں ولنر ایبل اسٹیبلشمنٹ کا قانون جاری ہوچکا ہے جس کے مطابق پولیس کی اور بینک انتظامیہ کی ذمہ داریاں بالکل واضح ہیں۔ لاہور پولیس شہر میں تجارتی مراکزکے حفاظتی انتظامات SOPکے مطابق مکمل کروانے کی پابند ہے اور بینک انتظامیہ کی مشاورت سے مکمل کروا رہے ہیں۔ ہم نے آج کی ملاقات میں بینکوں کی سینئر قیادت کی سفارشات سن کر نوٹ کر لی ہیں جن کو حکامِ بالا تک پہنچایا جائیگا۔ اگر پولیس اور بینک انتظامیہ آپس میں مکمل رابطہ میں ہیں تو کوئی نا خوشگوار واقعہ سامنے نہیں آ سکتا۔

مزید : علاقائی