مسئلہ کشمیر کے حل تک جنوبی ایشیا میں امن قائم نہیں ہوسکتا،واجدعلی برکی

مسئلہ کشمیر کے حل تک جنوبی ایشیا میں امن قائم نہیں ہوسکتا،واجدعلی برکی

برمنگھم (این این آئی) سابق صدارتی مشیر برائے اوورسیز ، پیپلز پارٹی کے سینئر راہنما اور پیپلز بزنس فورم برطانیہ کے سابق چیئرمین واجد علی برکی کا کہنا ہے کہ عالمی برادری کو چاہئے کہ مسئلہ کشمیر کو حل کرائے اس مسئلہ کے حل تک جنوبی ایشیا میں امن قائم نہیں ہوسکتا، کیونکہ دونوں ملک یعنی پاکستان، بھارت ایٹمی اسلحہ رکھتے ہیں، اگر اس مسئلہ کو حل نہ کیا گیا تو بڑی جنگ کا خطرہ ہے، مقبوضہ کشمیر میں بے گناہ کشمیریوں کے قتل عام کو بند کیا جائے، خواتین اور بچوں سے زیادتی کے واقعات میں دن بدن اضافہ ہورہا ہے، عالمی برادری پاکستان، بھارت کے درمیان مصالحتی کردار ادا کرے۔ ان خیالات کاکا اظہار انہوں نے اپنے ایک بیان میں کیا انہوں نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جانا چاہئے۔ اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کا فوری طور پر اجلاس بلائے اور وہاں پر بھارتی فوج کے مظالم ان کے سامنے رکھے جائیں۔ واجد علی برکی نے مزید کہا ہے کہ بھارت عالمی برادری کی مسئلہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کیلئے پاکستان میں دہشتگردی اور اپنے آلہ کاروں کو استعمال کر کے حالات خراب کر رہا ہے ۔ عالمی برادری کو چاہیے کہ وہ بھارتی ہتھکنڈوں کا نوٹس لے۔

مزید : عالمی منظر