لاہور ہائیکورٹ نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو دارلامان بھیج دیا

لاہور ہائیکورٹ نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو دارلامان بھیج دیا

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو دارلامان بھیج دیا اور پولیس کو لڑکی کے شوہر کے خلاف مقدمات کا ریکارڈ طلب کرلیا ہے ۔عدالت میں درخواست گزار لڑکی رخسانہ نے موقف اختیار کیا کہ اس نے علی حیدر کے ساتھ پسند کی شادی کی لیکن گھر والوں نے شو ہر کے خلاف اغوا کا جھوٹا مقدمہ درج کردایاہے۔لڑکی کے والدین نے بتایا کہ علی حیدر اور اس کے والد پر کئی فوجداری مقدمات ہیں۔عدالت نے لڑکی کو دارالامان بھجوانے کا حکم دیا تو لڑکی دارالامان جانے کے حکم پر لڑکی رو پڑی اوراپنے والدین سے کہا کہ وہ اپنے شوہر کے ساتھ رہنا چاہتی ہوں جھوٹے مقدمے نہ بنائیں ،عدالت نے لڑکی کے شوہر کے خلاف مقدمات کا ریکارڈ بھی طلب کرلیاہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...