بن لادن کمپنی نے واجبات5ستمبرسے دینے کااعلان کردیا

بن لادن کمپنی نے واجبات5ستمبرسے دینے کااعلان کردیا

جدہ (محمد اکرم اسد) سعودی بن لادن گروپ نے اپنے ملازمین کی تنخواہوں اور واجبات کی ادائیگی 5 ستمبر سے شروع کرنے کا اعلان کردیا۔ یاد رہے کہ سعودی فرمانروا شاہ سلمان عبدالعزیز نے مملکت میں متاثر تمام غیر ملکی کارکنوں کے مسائل جلد حل کرنے کی ہدایات جاری کی تھیں۔ سعودی ایوان ہائے صنعت و تجارت کونسل کے رکن نے واضح کیا ہے کہ سعودی اور غیر ملکی ملازمین کی تنخواہیں نیز ان کے واجبات کی ادائیگی پیر 5 ستمبر سے شروع ہوگی۔ انہوں نے گروپ کی جانب سے جاری ہونے والے 2 بیانات کی فوٹو کاپیاں بھی ٹویٹر پر جاری کی ہیں جن میں سے ایک کا تعلق بن لادن گروپ کے تمام ملازمین اور دوسرے کا تعلق مطاف کے توسیعی منصوبے الشامیہ ترقیاتی منصوبے اور حرمین شریفین ٹرین سٹیشن کے کارکنان سے ہے۔ خیال رہے کہ گزشتہ سال ماہ ذی الحج کے دوران حرم میں کرین گرنے کے بعد سے بن لادن گروپ مالیاتی مسائل اور نقصانات سے دوچار ہے جس سے ملازمین کی تنخواہیں بروقت ادا نہ کی جاسکیں۔ ملازمین نے متعدد مواقع پر ناراضی کا کھل کر اظہار کیا۔ خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ہدایت جاری کی تھیں کہ سعودی عرب میں متاثر تمام غیر ملکی کارکنان کے مسائل جلد از جلد حل کئے جائیں۔ ایک رپورٹ یہ ہے کہ بن لادن گروپ ملازمین کے واجبات اور تنخواہیں ادا کرنے کی وجہ سے غیر منقولہ جائیدادیں فروخت کرنے پر مجبور ہوگیا۔ باخبر ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ نیشنل کمرشل بینک کی رپورٹ میں بتایاگیا ہے کہ بن لادن گروپ کے پاس 1490 ارب ریال کے ٹھیکوں میں سے 248 ارب ریال کے زیر تکمیل ٹھیکے باقی ہیں۔ گروپ پر خارجی اور داخلی 72 ارب ریال کے قرضے بھی ہیں۔ بن لادن کمپنی نے سعودی برٹش بینک اور نیشنل عرب بینک سے حال ہی میں 2.5 ارب ریال کا قرضہ لیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...