کرکٹ ٹورنامنٹ میں مقامی کھلاڑیوں کو نظرانداز کرنے کیخلاف کھلاڑیوں کا احتجاجی مظاہرہ

کرکٹ ٹورنامنٹ میں مقامی کھلاڑیوں کو نظرانداز کرنے کیخلاف کھلاڑیوں کا ...

تنگی(نمائندہ پاکستان)تنگی میں ٹی پی ایل کے نام سے شروع ہونے ہوالا کرکٹ ٹورنامنٹ میں مقامی کھلاڑیوں کو نظرانداز کرنے کیخلاف کھلاڑیوں کا احتجاجی مظاہرہ ۔مظاہرین نے پوچہ پل کے مقام پر سڑک پر ٹائریں جلا کر اسے ہر قسم ٹریفک کیلئے بند کیا ۔مظاہرین کھلاڑیوں نے بینرز اور پلے کارڈ اٹھارکھے تھے جن پر ٹی پی ایل کے خلاف نعرے درج تھے ۔تنگی میں تنگی پریمئر لیگ کے نام سے شروع ہونے والا کرکٹ ٹورنامنٹ کیخلاف مقامی کھلاڑیوں نے ڈبل سٹار کرکٹ کلب کے کپتان ڈاکٹر حامد کی قیادت میں احتجاجی مظاہرہ کیا ۔جس میں کھلاڑیوں ،طلباء اور دیگر مکتب فکر کے لوگوں نے کثیر تعدا د میں شرکت کی ۔مظاہرین نے تنگی بوچہ پل کے مقام پر سڑک پر ٹائیرین جلا کر اسے ہرقسم ٹریفک کیلئے بند کیا اور انہوں نے بینرز اور کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر ٹی پی ایل کیخلاف نعرے درج تھے ۔اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سپورٹس کمیٹی چارسدہ سید سعید جان ،ڈبل سٹار کرکٹ کلب کے کپتان ڈاکٹر حامد ،کرکٹ کھلاڑیوں محمد شہریار اور دیگر کا کہناتھا کہ تحصیل تنگی میں شروع ہونے والاٹی پی ایل تنگی پرئمیر لیگ کے نام پر مقامی کھلاڑیو ں کا استحصال کیا جا رہا ہے اور مقامی کھلاڑیوں کے بجائے غیر مقامی کرکٹ کھلاڑیوں کو ترجیح دی جارہی ہے ۔مقررین کا کہنا تھا کہ ٹورنامنٹ کو تنگی میں پہلے سے موجود سپورٹس کمپلیکس کے بجائے تعلیمی درسگاہ گورنمنٹ ڈگری کالج تنگی میں کھیلا جا رہا ہے جس سے کالج کے طلباء کے اپنی غیر نصابی سرگرمیاں متاثر ہونگے ۔انہوں نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اس ٹورنامنٹ سے علاقے میں سٹے بازی ہونے کا بھی خدشہ ہوگا لہٰذہ مقامی انتظامیہ کو چاہیے کہ مذکورہ ٹورنامنٹ کے انعقاد کو روکا جائے جس سے کھلاڑیوں کے درمیان آنے والا ممکنہ خون خرابہ کا خاتمہ ہوگا ۔ضلعی سپورٹس چیئرمین سید سعید جان نے کا کہنا تھا کہ ٹی پی ایل انتظامیہ کو چاہیے تھا کہ وہ ٹورنامنٹ شروع ہونے سے پہلے مقامی انتظامیہ کو اگاہ کرتے لیکن انہوں نے مقامی انتظامیہ کو بے خبر رکھا اور ٹورنامنٹ شروع کرنے کا اعلان کیا جس سے شک وشبہات جنم لیاجا رہا ہے ۔مظاہرین اے سی تنگی محمد علی خان کیساتھ کامیاب مذاکرات کیبعد پرامن طور پر منتشر ہوئے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر