خیبر پختونخوا میں بڑھتی ہوئی آبادی اور بے روزگاری میں اضافے سے سنگین چیلنجز کا سامنا ہے ، اسد قیصر

خیبر پختونخوا میں بڑھتی ہوئی آبادی اور بے روزگاری میں اضافے سے سنگین چیلنجز ...

صوابی(بیورورپورٹ) سپیکرخیبر پختونخوا اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ صوبہ خیبر پختونخوا میں بڑھتی ہوئی آبادی اور بے روزگاری میں اضافے سے سنگین چیلنجزکا سامنا ہے ان خیالات کااظہار انہوں نے جمعرات کے روزٹوپی صوابی روڈ پر صفدر شہید چوک کے مقام پر منہدم شدہ پل کی ازسرنو تعمیر کی سنگ بنیاد کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔تقریب سے تحصیل ناظم ٹوپی سہیل یوسف زئی ،نائب ناظم یونس خان ،حاجی رنگیز خان اور جاوید خان یوسف زئی نے بھی خطاب کیا ۔سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ نئے پل کی تعمیر پر تقریباڈھائی کروڑ روپے کی لاگت آئے گی اور یہ چار ماہ کی قلیل مدت میں مکمل ہو گا انہوں نے کہا کہ نیا بننے والا پل پہلے والے پل سے زیادہ جدید اور معیاری ہو گا انہوں نے کہا کہ یہ حکومت لوگوں کی اپنی حکومت ہے اور ہاتھ عوام کی نفس پر ہے انہوں نے کہا کہ حکومت عوام کے رکاوٹ عوام دشمن کے مترادف ہے مسائل پر بھر پور توجہ دے رہی ہے اور روزگار کی فراہمی حکومت کی ترجیحات میں سر فہرست ہے انہوں نے کہا کہ انہیں اس بات کا بخوبی احساس ہے کہ نوجوان نسل کو اگر روزگار نہ ملا تو اس میں احساس محرومی پیدا ہو گا اور عسکریت پسندی کو فروغ مل سکتاہے انہوں نے کہا کہ ترقی کا نیا دور شروع ہونے والا ہے اور وہ مستقبل میں نیا خیبر پختونخوا دیکھ رہے ہیں ۔سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ سیاست میں ترقیاتی کاموں میں انہوں نے کہا کہ ترقیاتی کاموں میں سب کے تعاون کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ صوابی یونیورسٹی کو 80کروڑ روپے کی ریکارڈ رقم دی گئی ہے انہوں نے واضح کیا کہ سوات موٹرو ے منصوبے کے آغاز میں ان کا انتہائی بنیادی کلیدی کردار ہے جبکہ چائنا زون کے لئے دس ہزار کنال اراضی رکھی گئی ہے انہوں نے کہا کہ غازی اور گدون کیانڈسٹریل سٹیٹس کو مزید وسعت کی جائے گی انہوں نے کہا کہ صحت انصاف کارڈ کے ذریعے ایک کروڑ لوگوں کو علاج معالجے پر خرچ کیا جاسکے گا ۔ سپیکر اسد قیصر نے اعلان کیا کہ صوابی کو ایجوکیشن سٹی بنانے کی منصوبہ بندی کی جارہی ہے ،انہوں نے کہا کہ ان کی خواہش سے تعلیم کے شعبے میں مثالی کام کروں گا تاکہ نوجوان نسل اس سے مستفید ہو سکے انہوں کہا کہ ان کی تمام تر توجہ صوابی کو تعلیمی شہر قرار دینے پر ہے کہ علاقے میں روزگار کے بہتر اور نئے مواقع پیدا ہو سکیں ۔سپیکر اسد قیصر نے اعلان کیا کہ انہوں نے ٹوپی ہسپتال کی عمارت کو 30جون تک مکمل کرنے کی احکامات جاری کر رکھے ہیں انہون نے کہا اس ہسپتال کی تعمیر سے علاقے کے لوگوں کو علاج معالجے کی جدید سہولتیں ان کی دہلیز پر میسر آئیں گی انہوں نے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں سے رشوت وکمیشن کے باب کو ہمیشہ کیلئے ختم کر دیا ہے ،سپیکر صوبائی اسمبلی نے کہا کہ تربیلہ سے صوابی آنے والی بجلی کی ہائی پاور ٹرانسمیشن لائن کی تکمیل سے بجلی کی وولٹیج مین بہتری رونما ہوئی ہے جبکہ مرغز ،زیدہ ،مینے ،باجہ بام خیل ، جلبی ،اور چھوٹا لاہور سمیت مختلف علاقوں مٰن بجلی کے نئے فیڈر قائم کئے جائیں گے انہوں نے کہا کہ چالیس کروڑ روپے کی خطیر رقم بجلی کے ٹرانسفارمروں کو دی گئی جبکہ سوئی گیس کی فراہمی کیلئے مرکزکی عدم تعاون کی پالیسی کے باعث عدالت سے رجوع کیا گیا مگر عدالت کے فیصلے کے باوجود وفاق گیس کی فراہمی میں تساہل سے کام لے رہاہے ۔انہوں نے کہا کہ اس کے باوجود بھی وزیراعلٰی پرویز خٹک نے وفاق کو خط لکھا کہ وفاق گیس فراہم کرنے کو فنڈ ہم دیں گے ۔سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ علاقے میں ٹیکنیکل یونیورسٹی اور ٹیکنیکل کالج کے علاوہ پی اے ایف ہسپتال بنایا جائے گا جبکہ صوابی میں ٰ ایک ہاوسنگ سکیم شروع کرنے کا بھی منصوبہ پوری سنجیدگی سے زیر غور ہے ۔قبل ازیں سپیکر اسد قیصر نے ٹوپی صوابی روڈ پر نئے ٹوپی پل پر تعمیراتی کام کے آغاز بھی باقاعدہ افتتاح کیا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...