قومی اسمبلی میں الطاف حسین کے پاکستان مخالف بیانات کے خلاف مذمتی قرارداد منظور

قومی اسمبلی میں الطاف حسین کے پاکستان مخالف بیانات کے خلاف مذمتی قرارداد ...
قومی اسمبلی میں الطاف حسین کے پاکستان مخالف بیانات کے خلاف مذمتی قرارداد منظور

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )متحدہ قومی موومنٹ نے الطاف کی پاکستان مخالف تقریر کے خلاف مذمتی قراداد قومی اسمبلی کے سیکرٹریٹ میں جمع کرادی۔ایوان میں متحدہ اراکین اسمبلی نے پاکستان زندہ باد کے نعرے بھی لگائے۔دوسری جانب حکومت اور اپوزیشن کی جانب سے بانی ایم کیو ایم کے خلاف متفقہ طور پر تیار کی گئی قراردادجو کہ متحدہ سے پہلے جمع کرائی گی تھی، منظور کر لی گئی۔

روزنامہ پاکستان کی تازہ ترین اور دلچسپ خبریں اپنے موبائل اور کمپیوٹرپر حاصل کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

قرار داد کے متن میں 22اگست کو بانی ایم کیو ایم کے اشتعال انگیز بیان کی شدید مذمت کی گئی ہے۔متن میں کہا گیا ہے کہ الطاف حسین نے تقریر میں میڈیا کیخلاف اکسایا جس کی مذمت کرتے ہیں۔پارلیمنٹ ،فوج ،عدلیہ اورمیڈیا کے ساتھ مکمل اظہار یکجہتی کرتے ہیں۔متن میں کہا گیا کہ جرائم ،تشدد،پاکستان مخالف ،نعروں یا کارروائیوں کی مذمت کرتے ہیں۔قراردادوفاقی وزیر برجیس طاہر نے ایوان میں پیش کی جس کے بعد اسے متفقہ طور پر منظو ر کرلیا گیا۔

قرارداد میں یہ بھی کہا گیا کہ ایم کیوایم پاکستان کے پیروکارتخلیق پاکستان کی جدوجہد کرنےوالوں کے بچے ہیں۔ایوان کاریاست اور اداروں سے مطالبہ ہے کہ کھلے دل سے ایم کیوایم پاکستان کاخیرمقدم کریں۔ایم کیوایم پاکستان اور اس کے حامی بلاشبہ پ±رخلوص پاکستانی ہیں۔قرارداد میں کہا گیا کہ ایوان23اگست کوایم کیو ایم پاکستان کے اپنائے گئے موقف کو سراہتا ہے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

خیال رہے کہ ایم کیو ایم کی جانب سے بھی الطاف کے خلاف مذمتی قرارداد تیار کرکے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرائی گئی تھی تاہم حکومت اور اپوزیشن متحدہ سے قبل ایک قرارداد تیار کرکے پیش کر چکے تھے جسے ایوان نے متحدہ کی قرارداد سے پہلے ہی متفقہ طور پر منظور کرلیا۔قوانین کے مطابق اگر قومی اسمبلی میں کسی ایک معاملے پر ایک قرارداد منظور کر لی جائے تو اس ایشو پر دوسری قرارداد پیش کرنے کی ضرورت نہیں رہتی۔اس لئے متحدہ نے بھی حکومتی و اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے تیار کردہ قرارداد کی حمایت کردی۔

مزید : قومی /اہم خبریں