پشاور کی کرسچئن کالونی اور مردان کچہری حملے کی ذمہ داری قبول کرلی گئی

پشاور کی کرسچئن کالونی اور مردان کچہری حملے کی ذمہ داری قبول کرلی گئی
پشاور کی کرسچئن کالونی اور مردان کچہری حملے کی ذمہ داری قبول کرلی گئی

  


پشاور, نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ وارسک کالونی اور مردان کچہری خود کش حملوں کی ذمہ داری کالعدم تنظیم جماعت الاحرار نے قبول کرلی ہے ، یہ تنظیم کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا ذیلی گروہ تھا لیکن بعد میں داعش کیساتھ الحاق کا اعلان کردیا تھا ۔یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ سانحہ کوئٹہ کے بعد اس تنظیم نے داعش سے بھی لاتعلقی کااعلان کرتے ہوئے کہاتھاکہ کارروائی اُنہوں نے خود کی ۔

بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز کے مطابق عسکری گروہ جماعت الاحرار نے ایک ہی دن کی دوسری کارروائی یعنی مردان میں خودکش حملے کی ذمہ داری قبول کرلی۔دوسری طرف ٹائمزآف انڈیا کے مطابق طالبان سے وابستہ اسی تنظیم نے کرسچئن کالونی پرحملے کی ذمہ داری قبول کرلی ۔

یادرہے کہ امریکہ نے بھی جماعت الاحرار کو دہشتگردتنظیموں کی فہرست میں شامل کررکھا ہے جبکہ یہ گروہ پاک افغان سرحدی علاقوں میں سرگرم ہے جس کی تشکیل طالبان دھڑوں میں اختلافات کے بعد2014ءمیں کی گئی۔

مزید : پشاور


loading...