پولی کلینک ہسپتال کیلئے آکسیجن سلنڈرز کی خریداری میں کرپشن، 7 ملزم تین روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے

پولی کلینک ہسپتال کیلئے آکسیجن سلنڈرز کی خریداری میں کرپشن، 7 ملزم تین روزہ ...
پولی کلینک ہسپتال کیلئے آکسیجن سلنڈرز کی خریداری میں کرپشن، 7 ملزم تین روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر سول جج عبدالغفور کاکڑ نے پولی کلینک ہسپتال کیلئے آکسیجن سلنڈرز کی خریداری میں کرپشن کے الزام میں گرفتار 7 ملزموں کو 3 روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کر دیا ہے جبکہ ایک ملزم کو جوڈیشل ریمانڈ پر اڈیالہ جیل بھجوا دیا ہے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق سپریم کورٹ کے نوٹس کے بعد پولی کلینک ہسپتال کیلئے آکسیجن سلنڈرزکی خریداری میں کرپشن کے الزام میں گرفتار 8 ملزموں کو سینئر سول جج عبدالفغور کاکڑ کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ ان ملزموں میں 5 ڈاکٹرز، وزارت کیڈ کا سیکشن آفیسر اور 2 کنٹریکٹرز شامل ہیں۔ ایف آئی اے نے عدالت کو بتایا کہ ملزموں نے آکسیجن گیس کی خریداری میں 3 کروڑ روپے کرپشن کی اور استدعا کی کہ مزید تفتیش، دیگر ملزموں کی گرفتاری اور رقم کی برآمدگی کیلئے جسمانی ریمانڈ منظور کیا جائے۔

وہ پاکستانی جس نے 10ہزار روپے کودیکھتے ہی دیکھتے لاکھوں کے کاروبارمیں بدل ڈالا، تمام پاکستانیوں کیلئے مثال بن گیا

ملزموں نے وکیل نے عدالت کے سامنے موقف اختیار کیا کہ 3سال بعدآکسیجن گیس کاایشو اٹھایاگیاجبکہ کنٹریکٹ 2013ءمیں دیا گیا تھا۔ کیس سپریم کورٹ میں زیرسماعت ہے اور مقدمہ کامدعی بھی گمنام ہے لہٰذا عدالت ایف آئی اے استدعا مسترد کرے۔ عدالت نے 7 ملزموں کو 3 روزہ جسمانی ریمانڈ پرایف آئی اے کے حوالے کر دیا جبکہ بیماری کے باعث ایک ملزم ڈاکٹر ذوالفقار صابر کو جوڈیشل ریمانڈ پر اڈیالہ جیل بھجوا دیا۔

مزید : اسلام آباد


loading...