ہائی کورٹ:پنجاب یونیورسٹی سنڈیکیٹ کا اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی

ہائی کورٹ:پنجاب یونیورسٹی سنڈیکیٹ کا اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی
ہائی کورٹ:پنجاب یونیورسٹی سنڈیکیٹ کا اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی)پنجاب حکومت نے لاہور ہائیکورٹ کو بتایا ہے کہ پنجاب یونیورسٹی کا آج 3ستمبر کو ہونے والا سنڈیکیٹ اجلاس غیرمعینہ مدت کے لئے ملتوی کر دیاگیا ہے،جس کے بعد چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران کو سنڈیکیٹ اجلاس سے روکنے کی درخواست پر مزید سماعت 22ستمبر تک ملتوی کر دی۔یہ درخواست آئی ٹی کالج کے پرنسپل منصور سرور نے دائر کررکھی ہے جس کی سماعت شروع ہوئی تو پنجاب حکومت کی طرف سے اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل انوار حسین نے موقف اختیار کیا کہ عدالت نے گورنر پنجاب سے سنڈیکیٹ اجلاس کے ایجنڈے کی سفارشات طلب کی تھیں، چانسلر پنجاب یونیورسٹی رفیق رجوانہ شہر میں موجود نہیں ہیں، گورنر نے پنجاب یونیورسٹی کا سنڈیکیٹ اجلاس فی الحال ملتوی کرنے کی سفارش کی ہے جس پر سنڈیکیٹ اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دیا گیا ہے، عدالت نے سرکاری وکیل کے بیان کو ریکارڈ کا حصہ بنانے کے بعد مزید سماعت 22 ستمبر تک ملتوی کرتے ہوئے وکلاکو مزید بحث کے لئے طلب کر لیا، درخواست گزار منصور سرور نے موقف اختیار کر رکھا ہے کہ قائم مقام وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران کو سنڈیکیٹ اجلاس کی صدارت کا اختیار نہیں کیونکہ قائم مقام وائس چانسلر صرف روز مرہ کے معمولات نمٹا سکتے ہیں اور پالیسی اور اہم معاملات میں مداخلت نہیں کر سکتے۔

مزید : لاہور


loading...