آزاد اور مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوان شادی کے بندھن میں بندھ کر ایک ہوگئے

آزاد اور مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوان شادی کے بندھن میں بندھ کر ایک ہوگئے
آزاد اور مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوان شادی کے بندھن میں بندھ کر ایک ہوگئے

  

سرینگر(مانیٹرنگ ڈیسک)کئی دہائیوں سے کشمیر تو ایک نہ ہوسکا لیکن آزاد کشمیر اور مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوان شادی کے بندھن میں بندھ کر ایک ہوگئے ہیں۔

بھارتی ٹی وی این ڈی ٹی وی کے مطابق کئی دہائیوں سے کشمیر تو ایک نہ ہوسکا لیکن آزاد کشمیر اور مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوان شادی کے بندھن میں بندھ کر ایک ہوگئے ہیں،یہ شادی سرینگر کے پولیس آفیسر اویس گیلانی نے مظفر آباد کی فضہ گیلانی سے رچائی ہے،شادی کی تقریب سرینگر میں منعقد ہوئی جہاں دونوں خاندانوں کے علاوہ دوست و احباب نے بھی شرکت کی ہے،یہ شادی ایسے وقت میں جب مقبوضہ کشمیر کی گلیوں میں بھارتی فوج دندناتی پھر رہی ہے،پوری وادی میں کرفیو نافذ ہے۔

وہ پاکستانی جس نے 10ہزار روپے کودیکھتے ہی دیکھتے لاکھوں کے کاروبارمیں بدل ڈالا، تمام پاکستانیوں کیلئے مثال بن گیا

جوڑے کا نکاح سن2014ءمیں میں مظفر آباد میں ہوا تھا،جب امن بس کے ذریعے اویس گیلانی اپنے والد شبیر گیلانی کے ساتھ مظفر آباد کے وزٹ پر آئے تھے۔

مزید : بین الاقوامی