سمہ سٹہ: آر یچ سی کا عملہ ڈیوٹی سے غائب‘ مریض دھکے کھا کر واپس 

سمہ سٹہ: آر یچ سی کا عملہ ڈیوٹی سے غائب‘ مریض دھکے کھا کر واپس 

  

 بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) محکمہ صحت کے افسران کی ملی بھگت سے قدیمی قصبہ سمہ سٹہ میں قائم آر ایچ سی کاعملہ غائب رہنے لگا، لاکھوں افراد پرمشتمل آبادی کے لوگ ایک نرس کے رحم وکرم پرچھوڑدیئے گئے۔ غریب مریض بروقت علاج معالجہ کی سہولت نہ ملنے پراپنی جانوں کی بازی ہارنے لگے۔ تفصیل کے مطابق آر ایچ سی سمہ سٹہ میں تعینات ایس ایم او، ایم اولیڈی ڈاکٹر اوردیگرعملہ نے ہسپتال سے غائب رہنامعمول بنارکھاہے اس علاقہ کے گردونواح کی(بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

 آبادی تقریبا ایک لاکھ افراد پرمشتمل ہے علاقہ آر ایچ سی سمہ سٹہ واحد علاج معالجہ کی سہولت ہے لیکن عملہ نے محکمہ صحت کے افسران کی اشیرباد سے من مانیاں کرناشروع کررکھی ہیں۔ بتایاگیاہے کہ سنیئرمیڈیکل آفیسر، لیڈی ڈاکٹراوردیگرعملہ نے اپنی علیحدہ ہسپتال اورکلینک بناررکھے ہیں اوروہ ہسپتال میں آنیوالے مریضو ں کواپنی علاج گاہوں کی طرف راغب کرتے ہیں اوروہاں پر خوب لوٹ مارکرتے ہیں۔ ہسپتال میں موجود مریضوں نے بتایاکہ ہسپتال میں نہ توسرکاری اددیات ملتی ہیں اورنہ ہی ڈاکٹراورسینئرسٹاف موجود رہتاہے۔ جس کی وجہ سے وہ علاج معالجہ کی سہولیات سے محروم ہیں۔ذرائع نے بتایاہے کہ ہسپتال میں تعینات کلرک تمام سٹاف کی حاضری لگاکر ان سے ماہانہ خرچہ وصو ل کرتاہے اوربائیومیٹرک مشین بھی خراب کررکھی ہے۔شہریوں نے بتایاکہ آر ایچ سی میں تعینات ایس ایم او صرف ایم ایل سی جاری اورلوگوں سے پیسے پکڑنے کی حدتک محددو ہے تھانہ سمہ سٹہ اورتھانہ مسافرخانہ کی حددومیں پیش آنیوالے لڑائی جھگڑے کے واقعات کی ایم ایل سی جاری کرنے کے عوض30 سے50 ہزار تک وصول کیے جاتے ہیں اورمذکورہ بالاایس ایم اوکی وجہ سے غلط ایم ایل سی جاری کرنے پرکئی بے گناہ افراد جیل کی سلاخوں کے پیچھے چل گئے ہیں۔ عوامی وسماجی حلقوں نے سیکرٹری صحت اوردیگراربا ب اختیارسے فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے۔

واپس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -