خیبر پختونخوا، بارشوں سے چھتیں گرنے کے واقعات، 2بچے جان بحق 6افراد زخمی 

خیبر پختونخوا، بارشوں سے چھتیں گرنے کے واقعات، 2بچے جان بحق 6افراد زخمی 

  

 پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) خیبرپختونخوا میں حالیہ بارشوں سے گھروں کی چھتیں گرنے سے اب تک دو بچے جاں بحق اورچھ افراد زخمی ہو گئے، 8 گھروں کو نقصان پہنچا۔خیبرپختونخوا کے مختلف اضلاع میں جاری شدید بارشوں سے گھروں کی چھتیں گرنے سے شانگلہ میں دو بچے جاں بحق ہو گئے جبکہ دیگر اضلاع میں گھروں کو نقصان پہنچنے سے چھ افراد زخمی ہو گئے، زخمیوں کو فوری طور پر ہپستال منتقل کر دیا گیا۔بونیر اورشانگلہ میں دو دو گھر جبکہ کرک، لوئر کوہستان، صوابی اور سوات میں ایک ایک گھر کو نقصان پہنچا ہے، متاثرہ علاقے میں امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔ متعلقہ ضلعی انتظامیہ کونقصان کی تخمینہ لگانے کی ہدایت جاری کر دی گئی ہیں۔

چھتیں گر گئیں 

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ حکومت بارش کا پانی سندھ اسمبلی کے تہہ خانے سے تاحال نہ نکال سکی، نئی عمارت کی مسجد اور کئی دفاتر ڈوب گئے۔پاکستان تحریک انصاف کے رہنما حلیم عادل شیخ اور دیگر اراکین نے عمارت کے متاثرہ حصے کا دورہ کیا۔ اس موقع پر حلیم عادل شیخ نے کہا سندھ اسمبلی کی بیسمنٹ میں بارش کا پانی جمع ہے۔ بیسمنٹ سے پانی نکالنے کیلئے کچھ نہیں کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ایوان کی مسجد اور لائبریری گندے پانی کے اندر ہے، 12 ارب سے زائد کی لاگت سے نئی اسمبلی عمارت بنائی گئی تھی جس کا پانی میں ڈوبنا لمحہ فکریہ ہے۔ سندھ اسمبلی میں پانی کی موجودگی وزیراعلیٰ سندھ کی نااہلی ہے۔ شدید بدبو اور تعفن سے بیسمنٹ میں کھڑا بھی نہیں ہوا جا سکتا۔

بارش/پانی

مزید :

صفحہ آخر -