سپریم کورٹ،جعلی اکاﺅنٹس کیس کے مرکزی ملزم انور مجیدکی طبی بنیادوں پر ضمانت منظور

سپریم کورٹ،جعلی اکاﺅنٹس کیس کے مرکزی ملزم انور مجیدکی طبی بنیادوں پر ضمانت ...
سپریم کورٹ،جعلی اکاﺅنٹس کیس کے مرکزی ملزم انور مجیدکی طبی بنیادوں پر ضمانت منظور

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے جعلی اکاﺅنٹس کیس کے مرکزی ملزم انور مجیدکی طبی بنیادوں پر ضمانت منظورکرلی ،عدالت نے انورمجیدکانام ای سی ایل میں شامل کرنے کاحکم دیدیا۔جسٹس قاضی امین نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ باہر جانے کوبھول جائیں ،اب باہر کوئی نہیں جائے گا۔

نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ میں جعلی اکاﺅنٹس کیس کے مرکزی ملزم انور مجید کی طبی بنیادوں پر درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی، پراسیکیوٹر نیب نے کہاہے کہ انور مجید پہلے دن سے ہسپتال میں ہیں ،آج تک نیب میں پیش نہیں ہوئے ،انور مجید کے عدم تعاون سے 15 تحقیقات اور 4 ریفرنسزا التوا کاشکار ہیں ،جسٹس مشیر عالم نے کہاکہ انورمجید تحقیقات میں رکاوٹ نہ ڈالیں ،جسٹس قاضی امین نے کہاکہ انور مجید کو شدید نوعیت کاعارضہ قلب ہے،علاج کرانا ان کا بنیادی حق ہے، باہر کوئی نہیں جائیگا،انورمجید کو بیرون ملک جانے کی اجازت نہیں دے سکتے ۔

جسٹس مشیر عالم نے کہاکہ اس تاثر کو زائل ہوناچاہئے کہ نیب کارویہ سیاسی افراد کیساتھ مختلف ہے،جسٹس قاضی امین نے کہاکہ ہسپتال میں بھی بندہ حراست میں ہوتو ذہنی دباﺅ رہتا ہے۔

پراسیکیوٹر نیب نے کہاکہ اگرمسئلہ سکیورٹی گارڈ کا ہے تو اسے ہٹا دیتے ہیں ،وکیل ملزم نے کہاکہ انور مجید کے شریک ملزم آصف زرداری بھی ضمانت پر ہیں ،انورمجید کی سرجری امریکا یا برطانیہ میں کرنے کی تجویز ہے۔جسٹس قاضی امین نے کہاکہ باہر جانے کوبھول جائیں ،اب باہر کوئی نہیں جائے گا۔

عدالت نے انور مجیدکی طبی بنیادوں پر ضمانت منظورکرلی اورملزم کانام ای سی ایل میں شامل کرنے کاحکم دیدیا۔عدالت نے انور مجید کو نیب حکام سے تفتیش میں تعاون کاحکم دیتے ہوئے پاسپورٹ رجسٹرار آفس میں جمع کرانے کاحکم دیدیا،سپریم کورٹ نے انور مجید کو10 کروڑ روپے کی بینک گارنٹی جمع کرانے کابھی حکم دیدیا۔

سپریم کورٹ نے کہاکہ نیب سے عدم تعاون پر انورمجید کی ضمانت خارج کردی جائے گی،عدالت کا حکم دیتے ہوئے کہاکہ بینک گارنٹی ڈپٹی رجسٹرار سپریم کورٹ کو جمع کرائی جائے ۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -